عراق کیخلاف ایرانی قومی فٹبال ٹیم کے میچ میں 10 ہزار شائقین کی شرکت کی تصدیق کی گئی

تہران، ارنا- حفاظتی، سماجی اور تادیبی کمیٹی برائے کورونا ڈیزیز مینجمنٹ کے چیئرمین نے کہا ہے کہ عراق کیخلاف ایرانی قومی فٹبال ٹیم کے میچ میں 10 ہزار شائقین کی شرکت کی تصدیق کی گئی۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس کمیٹی کے ذریعے نیشنل کورونا ڈیزیز مینجمنٹ ہیڈ کوارٹر کو ایران-عراق فٹبال میچ میں 10 ہزار شائقین کی شرکت کی تجویز پیش کی گئی۔ جس نے ویکسین کی 2 خوراکیں لگانے کی شرط پر اور بیماری کی صورتحال کی تعین سے ان 10 ہزار افراد کی شرکت کی منظوری دی۔

رپورٹ کے مطابق سید "مجید میر احمدی" نے سیکیورٹی، سماجی اور تادیبی کمیٹی برائے کورونا ڈیزیز مینجمنٹ کا 94 ویں اجلاس جس میں متعلقہ اداروں کے نمائندوں نے حصہ لیا تھا؛ اس مسئلے کا اٹھایا۔

انہوں نے ورلڈ کپ کوالیفائنگ مقابلوں کے سلسلے میں  27 جنوری کو ایران اور عراق کے درمیان میچ میں فٹبال شائقین کی موجودگی پر تبصرہ ہوئے کہا کہ اس کمیٹی کے ذریعے نیشنل کورونا ڈیزیز مینجمنٹ ہیڈ کوارٹر کو ایران-عراق فٹبال میچ میں 10 ہزار شائقین کی شرکت کی تجویز پیش کی گئی۔ جس نے ویکسین کی 2 خوراکیں لگانے کی شرط پر اور بیماری کی صورتحال کی تعین سے ان 10 ہزار افراد کی شرکت کی منظوری دی۔

انہوں نے مزید کہا کہ 10 ہزار تماشائیوں کی موجودگی پر مناسب سماجی فاصلے پر بیٹھنے اور ماسک کی سو فیصد استمعال میں کڑی نظر رکھنا ضروری ہے۔

میر احمدی نے کہا کہ  10 ہزار تماشائیوں کی موجودگی صرف ورلڈ کپ کوالیفائنگ مقابلوں میں قومی ٹیم کے ہونے والے میچوں کیلئے ہے اور دیگر میچوں کے لیے بیماری کے حالات کے مطابق فیصلے کیے جاتے ہیں۔

**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha