نئے ایرانی سال کے بجٹ میں تیل کے وعدوں میں 10 فیصد اضافہ

تہران، ارنا – ایرانی وزیر تیل نے کہا ہے کہ وزارت تیل نے اپنے بجٹ وعدوں سے 10 فیصد زیادہ حاصل کیا اس لیے حکومت کو سال 1400 میں تیل کی آمدنی سے بجٹ کا خسارہ نہیں تھا۔

یہ بات جواد اوجی نے پیر کے روز ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
اس موقع پر انہوں نے کہا کہ وزارت پیٹرولیم نے 1400 کے بجٹ کے نوٹ 1 اور نوٹ 14 کے مقابلے میں تقریباً 10 فیصد زیادہ پورا کیا، اور اس وجہ سے حکومت کو تیل کی آمدنی سے بجٹ کا خسارہ نہیں ہوا۔
اوجی نے کہا کہ تیل کی آمدنی میں سے وزارت تیل کا حصہ 14.5 فیصد اور قومی ترقیاتی فنڈ کا حصہ 20 فیصد لگایا گیا ہے اور حکومت کا حصہ 65.5 فیصد ہے۔
انہوں نے کہا کہ برآمدات میں اضافے اور رقم کی وصولی کی وجہ سے وزارت تیل نے نہ صرف حکومت کے 199 ارب تومان کے وعدے کو پورا کیا بلکہ 1400 میں تیل کی آمدنی سے تقریباً 10 فیصد زیادہ رقم بھی حکومت کے حوالے کردی۔
انہوں نے مزید کہا کہ پیٹرولیم مصنوعات کی برآمدات 1400 کے بجٹ کے نوٹ 14 پر ملکی پیٹرولیم مصنوعات کی فروخت اور برآمدات کے تمام وسائل شامل ہیں اور اس شعبے میں اگرچہ وزارت تیل کے وعدے 313 ہزار ارب تومان تھے لیکن 10 فیصد زیادہ کیا گیا۔
ایرانی وزیر تیل نے کہا کہ ہم نے پٹرول، پیٹرولیم گیس، ایل پی جی، مٹی کا تیل، جیٹ فیول، فیڈ اور پیٹرو کیمیکل کنڈینسیٹ کی گھریلو فروخت اور برآمدات میں کامیاب کارکردگی مظاہرہ کیا۔
انہوں نے کہا کہ پیٹرولیم مصنوعات کی برآمدات کے حوالے سے ملک کی توانائی کی حفاظت کو یقینی بنانا پہلی ترجیح ہے اور ذخائر اچھی حالت میں ہیں۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha