ایران میں 6 ہزار کلومیٹر سے زیادہ تیل اور گیس ٹرانسمیشن پائپ لائن پر عملدرآمد

تہران، ارنا - خاتم الانبیا ایئر ڈیفنس بیس کے کمانڈر نے کہا ہے کہ اس کیمپ نے ملک کے مختلف حصوں میں 6 ہزار کلومیٹر سے زیادہ تیل و گیس ٹرانسمیشن لائنوں کو نفاذ کیا ہے اور شازند قم ، ری پائپ لائن منصوبہ ان میں سے ایک ہے۔

برگیڈیئر جنرل "سعید محمد" نے تیل، گیس اور پیٹروکیمیکیل منصوبوں کے نفاذ میں ایرانی ماہرین کی صلاحیتیوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ آج ، ملک میں خود اعتمادی پیدا ہونے کی وجہ سے ہم تیل ، گیس اور پیٹرو کیمیکل کے شعبوں میں سپر پروجیکٹس کے نفاذ کا مشاہدہ کر رہے ہیں جس نے مقامی ماہرین کی صلاحیتوں کا اعتراف کیا ہے اور شازند قم، ری پائپ لائن ان منصوبوں میں سے ایک ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ شازند قم، ری پائپ لائن منصوبہ خاتم الانبیاتعمیراتی کیمپ کے ذریعہ ای پی سی کی شکل میں نافذ کیا گیا ہے جس کا مقصد اراک کی شازند ریفائنری کی مصنوعات کو قم اور آخر میں صوبہ تہران منتقل کرنا ہے۔ .
جنرل محمد نے اس پائپ لائن کی گنجائش پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ 26 انچ پائپ لائن 295 کلومیٹر لمبائی اور روزانہ 300 ہزار بیرل کی گنجائش کے ساتھ انٹرسٹی ٹرانسپورٹ کو کم کرنے کی بنیاد فراہم کرے گی اور دوسری طرف پٹرولیم مصنوعات کو پیداوار سے لے کر کھپت تک لے جانے کی لاگت کو کم کرتا ہے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha