12 دسمبر، 2020 10:48 AM
Journalist ID: 2392
News Code: 84143688
0 Persons
ایران کا ایجنسی کے غیرجانبدار ہونے کی ضرورت پر زور

لندن، ارنا – ویانا میں بین الاقوامی تنظیموں میں ایرانی مستقل مندوب نے امریکی وزارت خارجہ کے خصوصی نمائندے برائے ایرانی امور کے بیانات جو ایران کے سلسلے میں عالمی جوہری ادارے پر یورپیوں کے ساتھ ہم آہنگی میں دباؤ جاری رکھنے کے بیانات پر اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے اس ایجنسی کے غیرجانبدار ہونے کی ضرورت پر زور دیا۔

یہ بات "کاظم غریب آبادی" نے جمعہ کے روز اپنے ٹوئٹر پیج میں کہی۔
انہوں نے کہا کہ عالمی ایٹمی توانائی ایجنسی کے سابق سربراہ یوکیا آمانو نے 2019 کے 30 جنوری کو نئے عیسوی سال کی آمد کے موقع پر کہا کہ جوہری تصدیقی سرگرمیوں میں جزوی انتظام اور اس ادارے پر دباؤ کی کوششیں بے نتیجہ اور انتہائی نقصان دہ ہیں۔
انہوں نے کہا کہ اب واضح ہے کہ آمانو کا مطلب کونسا ملک تھا، ایجنسی کو لازمی طور پر آزاد ، غیرجانبدار اور پیشہ ور رہنا چاہئے، ہم سب کو ایجنسی کے خلاف ان دباؤ کو مسترد کرنا چاہئے ، جو پوری عالمی برادری کے مفادات کے لئے نقصان دہ ہیں۔
تفصیلات کے مطابق، ایرانی امور کے لئے امریکی حکومت کے خصوصی نمائندے "الیوٹ آبرامز" نے امریکی صہیونی جریدے "الگمینر" کے ساتھ انٹرویو دیتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ امریکی اگلی حکومت ایران مخالف زیادہ سے زیادہ دباؤ کی پالیسی کو جاری رکھے اور یورپی اتحادیوں کے ساتھ باہمی تعاون کے ذریعہ ایرانی جوہری منصوبے سے متعلق عالمی ایٹمی ادارے پر دباؤ ڈالے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha