اسرائیل کے خواب کی تعبیر کبھی نہیں کی جائے گی: پاکستانی شخصیات

اسلام آباد، ارنا - پاکستانی سیاسی اور مذہبی شخصیات نے صیہونی حکومت کے خلاف فلسطینی مزاحمت کی حمایت کرنے کے لئے اسلامی حکمرانوں اور اقوام کے اتحاد و اتفاق کو صحیح طریقہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اسرائیل کے احمقانہ خواب کی تعبیر کبھی نہیں کی جائے گی۔

مذہبی گروہوں اور سیاسی کارکنوں کے زیر اہتمام "بیت المقدس کی آزادی اور شہداء فلسطینیوں کی تقریب" کے عنوان سے کانفرنس جمعہ کو لاہور اور کوئٹہ کے شہروں میں منعقد ہوئی۔

مقررین نے خطے میں بیت المقدس کی قابض حکومت کے ساتھ کچھ عرب حکمرانوں کے سمجھوتہ کو اسلام اور خطے کی مظلوم اقوام کے خلاف ناقابل معافی غداری قرار دیا۔

انہوں نے کہا کہ اسلامی امت کا اتحاد اور یکجہتی عالمی استکبار بالخصوص صیہونی حکومت کے مذموم منصوبوں کا مقابلہ کرنے کا واحد صحیح طریقہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ صیہونی حکومت مشرق وسطی میں ایک عظیم تر اسرائیل بنانے کے منصوبے کو عملی جامہ پہنانے کی کوشش کر رہی ہے لیکن اس احمقانہ خواب کی ترجمانی کبھی نہیں کی جاسکتی ہے کیونکہ فلسطینی مزاحمت ایک لمحہ کے لئے بھی نہیں رک جاتی ہے اور اس مقدس محاذ کو عالم اسلام سمیت دنیا کی آزادی پسند ممالک کی بھرپور حمایت حاصل ہے۔

اس کانفرنس میں شرکاء نے فلسطین پوری انسانیت کا مسئلہ ہے اور بدقسمتی سے ہم ابھی بھی فلسطینی عوام کے گہرے درد کا مشاہدہ کر رہے ہیں۔

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 4 =