انڈونیشیا میں زیر حراست ایرانی آئل ٹینکر کی صورتحال کا جائزہ لیا جاتا ہے

تہران، ارنا – ایرانی وزیر تیل نے کہا ہے کہ انڈونیشیا کے پانیوں میں زیر حراست ایرانی آئل ٹینکر کے کیس کا جائزہ لیا جاتا ہے۔

یہ بات "بیژن نامدار زنگنہ" نے پیر کے روز صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ اس آئل ٹینکر پر ایرانی تیل لے جا رہا ہے جس کی صورتحال کا جائزہ لیا جارہا ہے۔
زنگنہ نے کہا کہ ہم نے ہمیشہ ایرانی تیل کی صنعت میں غیر ملکی کمپنیوں کی موجودگی کا خیرمقدم کیا ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ ایرانی تیل کی صنعت میں غیر ملکیوں کی موجودگی صلاحیتوں کو مستحکم کرنا اور ضروریات کو پورا کرنا ہے اور ایرانی صلاحیت ملک کی قومی دولت میں شامل ہے۔
انہوں نے کہا کہ تیل سے زیادہ اہم اس صنعت کی انسانی صلاحیت ہے جس کے ساتھ ہم انتہائی مشکل حالات میں اپنے دونوں پیروں پر کھڑے ہیں۔
تفصیلات کے مطابق، انڈونیشیا کی حکومت نے گذشتہ روز اعلان کیا کہ انڈونیشیا کے کوسٹ گارڈ نے اس ملک کے پانیوں میں اسلامی جمہوریہ ایران کے جھنڈے کے ساتھ ایک آئل ٹینکر کو پکڑا ہے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha