ایران میں پیٹرو کیمیکل پیداواری کی صلاحیت میں 4 ملین ٹن کا اضافہ

تہران، ارنا – ایرانی قومی پیٹروکیمیکل کمپنی کے سربراہ نے جمعرات کے روز صدر روحانی کے ذریعہ تین بڑے پیٹرو کیمیکل منصوبوں کے افتتاح کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ منصوبے ایران کی پیٹرو کیمیکل کی پیداواری صلاحیت میں 4 ملین ٹن سے زیادہ کا اضافہ کریں گے جس میں مجموعی طور پر 1.57 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری ہوگی۔

یہ بات "بہزاد محمدی" نے منگل کے روز ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے کہا کہ اس سال کے آخر تک 17 منصوبے استحصال کئے جائیں گے اور صنعت کی موجودہ گنجائش 66 ملین ٹن سے بڑھ کر 90 ملین ہو جائے گی۔ اور 2021 کے آخر تک 100 ملین ٹن کی گنجائش تک پہنچ جائیں گے اور آمدنی 25 ارب ڈالر ہوگی۔
بہزادی نے کہا کہ قومی پیٹروکیمیکل کمپنی نجی کمپنیوں کی 950 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری سے قائم کی گئی ہے اور ایران میں میتھانول کی پیداوار کے حجم میں سالانہ 2.3 ملین ٹن کا اضافہ ہوگا۔
انہوں نے مزید کہا کہ ڈیزائن اور تعمیر سے لے کر آلات کی فراہمی تک کی تمام تر سرمایہ کاری کا 66 فیصد مقامی طور پر فراہم کیا جاتا ہے اور توقع کی جاتی ہے کہ اس ملک کے لئے ہر سال 400 ملین ڈالر کی آمدنی ہوگی۔
انہوں نے کہا کہ کیمیا پارس پیٹروکیمیکل کا اجراء اگلا منصوبہ ہے جس کا جمعرات کے روز صنعتی علاقے عسلویہ میں صدر روحانی کے ذریعہ 600 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کے ساتھ افتتاح کیا جائے گا۔
انہوں نے کہا کہ کل سرمایہ کاری کا پچاس فیصد ملک میں خرچ کیا جاتا ہے اور اس پیٹرو کیمیکل صنعت سے متوقع سالانہ آمدنی کا تخمینہ 300 ملین ڈالر لگایا گیا ہے۔
ایرانی قومی پیٹرو کیمیکل کمپنی کے جنرل ڈائریکٹر نے اس بات پر زور دیا کہ تازہ ترین منصوبہ صوبے لرستان میں پیٹروکیمیکل اتپریرک کی تیاری سے متعلق ہے۔ اس منصوبے کی مالی امداد 20 ملین ڈالر ہے۔
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ اس کے نفاذ سے 60 براہ راست ملازمتیں پیدا ہوئیں جو سالانہ 30 ملین ڈالر کی آمدنی حاصل کرسکتی ہیں۔ انجینئرنگ اور تعمیر اس یونٹ کی تنصیب تمام ایرانی ہے اور سازوسامان کے میدان میں صرف 30 فیصد غیر ملکی سامان استعمال ہوا ہے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 5 =