پابندیوں کے نتائج دہشت گردی اور جنگی جرائم جیسے ہیں: تخت روانچی

نیویارک، ارنا - اقوام متحدہ میں ایران کے مستقل نمائندے نے پابندیوں کو غیر انسانی، غیر اخلاقی اور غیر قانونی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ان کا تباہ کن اور طویل المدتی نتائج دہشت گردی کی طرح وحشیانہ ہیں اور جنگی جرائم اور انسانیت کے خلاف جرائم کی طرح جنایتکارانہ ہے۔

یہ بات مجید تخت روانچی نے تنازعات میں بھوک اور قحط کے مسئلے سے متعلق اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس میں خطاب کرتے ہو‏ئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ خوراک کی عالمی عدم تحفظ سے نمٹنے ، ناکہ بندی اور پابندیوں کو ختم کرنے کو بین الاقوامی تعاون کو تقویت دینا ضروری ہے۔

بنیادی اصول کو ہر جگہ، ہر وقت اور ہر حالت میں، چاہے جنگ ہو یا امن ، سب کے لئے کھانے کے حق کے حصول کی ضمانت ہونا چاہیے۔ کیونکہ بھوک اور غذائی قلت سے آزادی ایک ناگزیر حق ہے۔

اس حق کے مکمل حصول کو قومی اور بین الاقوامی سطح پر ایک جامع نقطہ نظر اور فیصلہ کن اقدام اور غذائی عدم تحفظ کی تمام بنیادی وجوہات سے نمٹنے کی اشد ضرورت ہے۔

وی در این زمینه بر لزوم تقویت فعالیت‌های مربوط در مجمع عمومی، شورای اقتصادی و اجتماعی و همچنین نهادها و کارگزاری‌های تخصصی ذیربط نظام ملل متحد تأکید کرد.

انہوں نے اس سلسلے میں جنرل اسمبلی ، معاشی اور سماجی کونسل کے ساتھ ساتھ اقوام متحدہ کے متعلقہ خصوصی اداروں اور ایجنسیوں کی سرگرمیوں کو مضبوط بنانے کی ضرورت پر زور دیا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURD

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha