ایران میں روزانہ تقریبا دس ہزار کورونا وائرس ٹیسٹ کیے جا سکتے ہیں

زنجان، ارنا - ایرانی انسٹی ٹیوٹ پاستور کے سربراہ نے کہا ہے کہ ایران میں اٹھائے گئے اقدامات کی بدولت روزانہ کورونا وائرس کے لئے 10 ہزار ٹیسٹ کیے جا سکتے ہیں ، جبکہ امریکہ جیسے ترقی یافتہ ملک میں روزانہ 7 ہزار ٹیسٹ کیے جاتے ہیں۔

 علیرضا بیگلری نے کہا کہ فی الحال ، ایران میں پاستور انسٹی ٹیوٹ میں اٹھائے گئے اقدامات کی بدولت کورونا وائرس کے لئے ٹیسٹ کی گنجائش روزانہ دو  ہزار ٹیسٹ تک پہنچ چکی ہے ، اور یہ ایک بڑی تعداد ہے ، یہاں تک کہ اسٹینفورڈ یونیورسٹی میں بھی روزانہ ہزار ٹیسٹ کروائے جاتے تھے ، جبکہ دو ہفتوں تک ہمارے ملک نے کامیابی حاصل کی ہے۔
انہوں نے کہا کہ اس مقصد کے لئے ، پورے ملک میں 56 لیبارٹریاں تشکیل دی گئیں اور ان کے کام کو بہتر بنانے کے لئے اہم پیٹنٹ سازوسامان فراہم کیے گئے اور فی الحال ایک قابل اعتماد اور مربوط نیٹ ورک کی حیثیت سے کام کررہے ہیں ، جس کی تعریف عالمی ادارہ صحت کے ماہرین کرتے ہیں۔
انہوں نے ایرانی تشخیصی ٹیسٹوں کی تیاری کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ آئندہ چار ہفتوں میں لیبارٹری مراکز کو پہنچائے جائیں گے۔
انہوں نے مزید کہا کہ ایران میں پاستور انسٹی ٹیوٹ دنیا بھر کے نیٹ ورک کا بھی ایک رکن ہے جو ویکسین پر کام کرتا ہے اور چونکہ وائرس کو پوری طرح سے نہیں سمجھا جاتا ہے ، لہذا یہ عمل زیادہ لمبا ہوگا۔
انہوں نے کہا کہ پابندیوں کے باوجود ملک میں مریضوں کا علاج کئے جاتے ہیں جبکہ دوسرے ممالک میں بھی صورتحال بالکل مختلف ہے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 4 =