15 جنوری، 2022 12:08 PM
Journalist ID: 2392
News Code: 84613832
T T
1 Persons
چین کیساتھ 25 سالہ معاہدہ جمعہ سے فعال ہوگیا: امیرعبداللہیان

تہران، ارنا - ایران کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ چین کے ساتھ 25 سالہ معاہدہ جمعہ کے روز سے فعال ہو گیا۔

یہ بات "حسین امیرعبداللہیان" نے جمعہ کے روز چین کے ایک روزہ دورے کے دوران اپنے چینی ہم منصب کے ساتھ جامع مذاکرات کے اختتام پر کہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ جیسا کہ چینی حکام کے ساتھ بات چیت کے دوران اتفاق کیا گیا تھا، دونوں ممالک جمعہ سے جامع اسٹریٹجک معاہدے پر عمل درآمد شروع کر دیں گے۔
امیرعبداللہیان نے کہا کہ چین میں ہونے والے مذاکرات کے ساتھ ساتھ ایران نے جمعہ کو معاہدے پر عمل درآمد شروع کرنے کے لیے ضروری بنیادیں تیار کر لی ہیں۔
انہوں نے یہ بھی کہا کہ انہوں نے ایران کے صدر ابراہیم رئیسی کا پیغام اپنے چینی ہم منصب شی جن پنگ تک پہنچایا جس کا تعلق 25 سالہ معاہدے پر عمل درآمد شروع کرنے کے کام سے تھا۔
جہاں تک جوہری معاہدے کے فریم ورک کے اندر متعدد مغربی ممالک کے ساتھ ایران کے جوہری معاہدے پر ویانا میں جاری مذاکرات کا تعلق ہے، انہوں نے چینی سفیر کے مثبت کردار کو سراہا جنہوں نے اپنے روسی ہم منصب کے ساتھ مل کر ایران کے جوہری مذاکرات اور ایران مخالف پابندیوں کو ہٹانے کی ضرورت کا دفاع کرنا کھڑے ہوئے۔
انہوں نے کہا کہ آج ہم مزید اہم معاہدوں پر عمل پیرا ہیں تاکہ کم وقت میں ویانا میں ایک اچھا معاہدہ طے پا سکیں، روس کی طرح چین نے بھی اس میں بہت اہم کردار ادا کیا۔
امیرعبداللہیان نے امید ظاہر کی کہ جوہری معاہدے کے مغربی فریق ایک اچھے معاہدے تک پہنچنے کے مقصد کے ساتھ ایک حقیقت پسندانہ نقطہ نظر اپنائیں گے جس میں ایرانی قوم کے حقوق اور مفادات شامل ہوں گے۔
ایرانی وزیر خارجہ نے ویانا مذاکرات میں مغربی ممالک کی جانب سے کسی اقدام کی عدم موجودگی پر روشنی ڈالتے ہوئے، کہا کہ تین یورپی ممالک اور امریکہ دونوں اپنے غیر کاغذی پیغامات میں اچھی بیان بازی پیش کرتے ہیں لیکن عملی طور پر کوئی حقیقی اقدام پیش کرنے میں ناکام رہتے ہیں۔
انہوں نے مزید جوہری معاہدے کے مغربی فریقین کے رویے اور عمل میں تضاد کی طرف اشارہ کیا جس کا دعویٰ ہے کہ وہ پریشان ہیں لیکن ساتھ ہی یہ کہتے ہیں کہ وہ جلدی میں ہیں۔
امیرعبداللہیان نے کہا کہ میں بلند آواز میں یہ واضح کرنے کے لیے تیار ہوں کہ اسلامی جمہوریہ ایران ایک اچھے معاہدے کا خیرمقدم کرتا ہے جس کو کم سے کم وقت میں تیار کیا جائے گا جس کا حصول جوہری معاہدے کے مغربی اراکین پر منحصر ہے۔
امیرعبداللہیان چینی حکام سے بات چیت کے لیے جمعرات کی سہ پہر چین پہنچے۔
 جمعہ کو اپنے چینی ہم منصب وانگ یی کے ساتھ ملاقات میں دونوں فریقوں نے مختلف شعبوں میں باہمی تعاون کو وسعت دینے کی ضرورت پر زور دیا۔
 اس ملاقات میں ایران اور چین کے وزرائے خارجہ نے سیاسی، اقتصادی، تجارتی، قونصلر اور ثقافتی مسائل جیسے مختلف شعبوں میں دوطرفہ تعلقات کو مضبوط بنانے کے راستے تلاش کئے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha