ایرانی وزیر خارجہ نے کرغیزستان سے طویل المدتی تعاون پر زور دیا

تہران، ارنا- ایرانی وزیر خارجہ نے ہمسایہ ممالک سے تعلقات کے فروغ کی نئی حکومت کی پالیسی کی وضاحت کرتے ہوئے تیرہویں حکومت میں ایران اور کرغیزستان کے درمیان وفود کے تبادلہ کو تعلقات کے فروغ پر دونوں ممالک کے پختہ عزم کی علامت قرار دے دیا۔

رپورٹ ک مطابق ایران کے دورے پر آئے ہوئے کرغیزستان کی سلامتی کونسل کے نائب چیئرمین "طلعت بیک مصادیکف" نے آج بروز اتوار کو ایرانی وزیر خارجہ "حسین امیر عبداللہیان" سے ایک ملاقات میں ان سے باہمی دلچسبی امور سمیت مختلف علاقائی اور بین الاقوامی مسائل پر گفتگو کی۔

اس موقع پر ایرانی وزیر خارجہ نے ہمسایہ ممالک سے تعلقات کے فروغ کی نئی حکومت کی پالیسی کی وضاحت کرتے ہوئے تیرہویں حکومت میں ایران اور کرغیز ستان کے درمیان وفود کے تبادلہ کو تعلقات کے فروغ پر دونوں ممالک کے پختہ عزم کی علامت قرار دے دیا اور دونوں ممالک کے درمیان طویل المدتی تعاون بڑھانے پر زور دیا۔

انہوں نے کرغیرستان میں منعقدہ حالیہ کامیاب پارلیمانی انتخابات پر مباردکباد دیتے ہوئے تاجروں، سیاسی وفود اور سیاحوں کی نقل و حرکت کو آسان بنانے کے لیے دونوں ممالک کے دارالحکومتوں کے درمیان براہ راست پروازوں کے قیام کے ذریعے تعاون کے فروغ کی راہ ہموار کرنے پر زور دیا۔

امیر عبداللہیان نے کرغیزستان کو مغربی ایشیائی خطے سے ملانے کے لیے ٹرانسپورٹ، ٹرانزٹ اور کرغیزستان-بندر عباس ریلوے کوریڈور کے پائلٹ آپریشن کے شعبوں میں دونوں ممالک کے تعاون کیلئے اہم قرار دیا۔

در این اثنا کرغیزستان کی سلامتی کونسل کے نائب چیئرمین نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے حالیہ اجلاس کے موقع پر دونوں ممالک کے وزرائے خارجہ کے درمیان ملاقات اور گفتگو کی اہمیت پر تبصرہ کرتے ہوئے اس امید کا اظہار کرلیا کہ کرغزستان میں انتخابی مدت کے اختتام کے ساتھ ہی دونوں ممالک کے درمیان اقتصادی تعاون سمیت مختلف شعبوں میں تعاون کا نیا دور موجودہ صلاحیتوں کی بنیاد پر تشکیل پائے گا۔

انہوں نے منشیات کی اسمگلنگ سے نمٹنے اور سرحدوں کے شعبے میں تجربات کے تبادلے کے شعبے میں دونوں ممالک کے تعاون پر بھی زور دیا۔

نیز دونوں فریقین نے افغانستان کی تازہ ترین صورتحال پر تبادلہ خیال کیا اور ایرانی وزیر خارجہ نے افغانستان سے متعلق اسلامی جمہوریہ ایران کے موقف کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ ہم افغانستان میں تمام سیاسی اور نسلی گروہوں کی شرکت سے ایک جامع حکومت کے قیام کے خواہاں ہیں۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha