ایران کے فخر کیلئے کوئی کوشش سے دریغ نہیں کریں گی: ایرانی سوئمنگ چیمپئن

شیراز، ارنا – 12 سالہ نوعمر ایرانی تیراکی نے کہا ہے کہ ہم نے اپنے ملک کے فخر کے لیے کھیلوں اور سائنس کے میدان میں ایک ہدف مقرر کیا ہے اور اس اہم مقصد کو حاصل کرنے کی کوشش کر رہا ہوں تاکہ اپنے وطن کے لیے ایک کارآمد فرد بنوں۔

یہ بات شہر شیراز سے تعلق رکھنے والی نوعمر ایرانی لڑکی ویستا فروزش جو 2009 میں پیدا ہوئیں، نے ہفتہ کے روز ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
وہ شیراز ٹیلنٹڈ اسکول میں پڑھتی ہیں اور انہیں ایران کا بہترین تیراک قرار دیا گیا ہے۔
فروزش نے کہا کہ ایران میں بہترین تیراک کا خطاب جیت کر میں یہ ثابت کرنا چاہتی تھی کہ اگر ہم اپنے لیے ایک ہدف طے کریں تو ہم اپنے مقاصد تک پہنچ سکتی ہیں اور ایران کے فخر کیلئے کوئی کوشش سے دریغ نہیں کریں گی۔
تیراکی کے مختصر مقابلوں میں جو 19 اکتوبر کو دارالحکومت تہران میں منعقد ہوئے، صوبہ فارس کی ٹیم نے چار طلائی اور دو چاندی کے تمغے جیت کر چیمپئن شپ جیت لی۔
ویستا فروزش نے تین طلائی اور ایک چاندی تمغوں کے ساتھ  ان مقابلوں کی بہترین تیراک بن گئیں۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha