ایران سے بارٹر سسٹم میکنزم کا جلد ہی نفاذ ہوگا: پاکستانی وزیر اعظم کے مشیر

کراچی، ارنا- پاکستانی وزیر اعظم کے مشیر برائے تجارت اور سرمایہ کاری کے امور نے اپنے حالیہ دورہ تہران کے موقع پر ایرانی حکام سے تجارتی اور اقتصادی مذاکرات پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان بارٹر سسٹم میکنزم کا جلد ہی نفاذ ہوگا۔

رپورٹ کے مطابق، "عبدالرزاق داؤد" نے کراچی میں منعقدہ 17 ویں مشینری انڈسٹری نمائش کی سائڈ لائن میں ایرانی پویلین کے دورے کے موقع پر ارنا نمائندے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کراچی کی نمائش میں ایرانی کمپنیوں کی موجودگی ہماری خوشی کا باعث ہوگئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم ایرانی پویلین کو دیکھ رہے ہیں اور ہم نے دیکھا کہ وہ اپنی مصنوعات کو ہماری توقع سے بہتر پیش کیا ہے۔

پاکستانی وزیر اعظم کے مشیر تجارت نے اپنے حالیہ دورہ ایران اور دونوں ممالک کی مشترکہ تجارتی کمیٹی کے نویں اجلاس میں شرکت کے نتائج پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جلد ہی دونوں ہمسایہ ممالک کے درمیان  بارٹر سسٹم میکنزم قائم ہو جائے گا۔

عبدالرزاق داؤد نے تہران اور اسلام کے درمیان تجارتی مذاکرات کو تعمیری قرار دیتے ہوئے کہا کہ اہم بات یہ ہے کہ ہمیں دوطرفہ مشاورت اور معاہدوں کو تیزی سے آگے بڑھنے کی ضرورت ہے۔

واضح رہے کہ وزیر اعظم پاکستان کے مشیر نے کراچی میں منعقدہ مشینری انڈسٹری کی بین الاقوامی نمائش میں شرکت کے دوران، ایرانی پویلین کا دورہ کیا اور ہمارے ملک کے متعدد تاجروں اور کاریگروں سے ملاقات کی۔

خیال رہے کہ ایران- پاکستان مشترکہ تجارتی کمیٹی کے نویں اجلاس کا 6 اور 7 نومبر کو پاکستان کے وزیر اعظم کے مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد کے سرکاری دورہ ایران سے انعقاد کیا گیا۔

اس دورے کے دوران کوئٹہ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور زاہدان چیمبر آف کامرس کے درمیان کوئٹہ چیمبر کے چیئرمین اور نائب صدر "فدا حسین دشتی" اور "محمد ایوب مریانی" کی موجودگی میں مفاہمت کی ایک یادداشت پر دستخط کیے گئے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha