"تعمیری اور جامع تعاون"؛ ایران-آسٹریا تجارتی کانفرنس کا محور 

لندن، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران اور آسٹریا کی تجارتی کانفرنس، "تعمیری اور جامع تعاون" پر توجہ دینے سے دونوں ممالک کے تاجروں، اقتصادی کارکنوں اور نمائندوں کی ایک بڑی تعداد کی موجودگی سے 19 اور 20 اکتوبر کو ویانا میں منعقد ہوئی۔

رپورٹ کے مطابق، منعقدہ اس کانفرنس کے اجلاس میں چیمبر کے وائس چیئرمین "نریمان صدری" کی قیادت میں ایران- آسٹریا جوائنٹ چیمبر آف کامرس کے بورڈ ممبران، وفاقی اقتصادی چیمبر کے فارن ٹریڈ ڈیپارٹمنٹ کے سربراہ "مائیکل اوتر" اور تہران میں آسٹرین سفارت خانے کے اقتصادی مشیر "گرابمایر" نے دونوں ممالک کے درمیان تجارتی اور معاشی مسائل پر تبادلہ خیال کیا۔

کانفرنس کے آغاز میں ویانا میں ایرانی سفارت خانے کے ماہر معاشیات نے سامعین کے لیے اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر کا پیغام پڑکے سنایا؛ انہوں نے اس پیغام میں، دیرینہ تجارتی تعلقات اور مثبت ماحول کی طرف اشارہ کرتے ہوئے مشترکہ مقاصد کے حصول کیلئے سفارت خانے کی تعمیری تعاون اور چیمبر کے ساتھ جامع تعاون کی تیاری کا اظہار کیا۔

ایرانی سفیر نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی تیرہویں حکومت معاشی سفارتکاری پر توجہ دینے سے تجارتی تعاون کے فروغ پر پختہ عزم رکھتی ہے۔

اس اجلاس کے بعد، ایران میں کام کرنے والی آسٹرین یورپی کمپنیوں نے ایران میں اپنی کاروباری سرگرمیوں خاص طور جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی اور 2018 کو امریکہ کیجانب سے ایران کیخلاف پابندیوں کے دور میں، وضاحتین پیش کیں۔

ان کمپنیوں نے ایران اور ایرانی مارکیٹ کے بارے میں اشارے اور شماریاتی معلومات اورا یران کے ذریعے خطے کے ممالک کی مارکیٹ میں موجودگی کے امکانات سے متعلق معلومات کو ناظرین کے سامنے پیش کیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha