ایران نے صہیونی ریاست کی کسی بھی ممکنہ مہم جوئی اور غلط حساب پر خبر دار کیا

نیویارک، ارنا- اقوام متحدہ میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے مستقل مندوب اور سفیر نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے سربراہ کے نام میں ایک پیغام میں کہا ہے کہ ہم صہیونی ریاست کیجانب سے ایران  اور اس کی پُرامن جوہری سرگرمیوں کیخلاف کسی بھی غلط حساب اور ممکنہ فوجی مہم جویی کی وارننگ دیتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق، اقوام متحدہ میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر اور مستقل مندوب "مجید تخت روانچی" نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے سربراہ کے نام میں ایک خط میں ناجائز صہیونی ریاست کی حالیہ دھمکیوں پر وارننگ دی ہے۔

خط میں کہا گیا ہے کہ ناجائز صہیونی ریاست کی اشتعال انگیز اور مہم جوئی کی دھمکیوں کی تعداد اور شدت مسلسل بڑھ رہی ہے اور خطرناک حد تک پہنچ چکی ہے۔

 خط میں مزید کہا گیا ہے کہ تازہ ترین دھمکی کو اس ریاست کے چیف آف سٹاف نے بنایا تھا؛ جس نے دھمکی دی تھی کہ "ایران کے جوہری پروگرام کے خلاف آپریشنل پلانز پھیل رہے ہیں" اور یہ کہ ہم مختلف شعبوں میں ایران کی صلاحیتوں کو تباہ کرنے کے لیے آپریشن کسی بھی وقت جاری رہیں گے"

خط میں کہا گیا ہے کہ 2021 میں اس ریاست کی سابقہ ​​دھمکیوں کے خلاف ہمارا احتجاج 1 فروری، 12 اپریل، 27 اگست اور 14 ستمبر کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کو لکھے گئے ہمارے خطوط سے ظاہر ہوتا ہے۔

خط میں مزید کہا گیا ہے کہ ناجائز صہیونی ریاست کیجانب سے اقوام متحدہ کے بانی ارکان میں سے ایک کے خلاف، اس طرح کی واضح منظم دھمکیاں؛ بین الاقوامی قانون بالخصوص اقوام متحدہ کے چارٹر کے آرٹیکل 2 (4) کی سنگین خلاف ورزی ہے۔

خط میں کہا گیا ہے کہ اس حقیقت کہ ناجائز صہیونی ریاست "ایران کی صلاحیتوں کو تباہ کرتی رہتی ہے" سے ظاہر ہوتی ہے کہ وہ ماضی میں ہمارے پُرامن جوہری سرگرمیوں کیخلاف دہشتگرد حملوں کی ذمہ دار ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha