خلیج فارس میں تین جزیروں کے بارے میں متحدہ عرب امارات کے دعووں پر ایران کا ردعمل

نیو یارک، ارنا - اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں اسلامی جمہوریہ ایران کے وفد نے اس بات پر زور دیا کہ تینوں ایرانی جزائر ابو موسیٰ ، بڑا اور چھوٹا تنب ایرانی سرزمین کا لازمی حصہ ہیں اور اس بات کے برعکس کسی بھی دعوے کو واضح طور پر مسترد کردیا جائے گا۔

اسلامی جمہوریہ ایران کے وفد نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 76 ویں اجلاس میں متحدہ عرب امارات کے نمائندے کے بیانات پر اسلامی جمہوریہ ایران کے وفد کے جواب کا مکمل متن ، جو ایرانی سفارت کاروں میں سے ایک نے پڑھا ، درج ذیل ہے:

میں تینوں ایرانی جزائر ابو موسیٰ ، بڑا اور چھوٹا تنب  اور اپنے ملک کی علاقائی سالمیت کے خلاف متحدہ عرب امارات کے نمائندے کے بے بنیاد الزامات کا جواب دینا چاہتا ہوں۔

اسلامی جمہوریہ ایران اپنے مضبوط موقف کو دہراتا ہے کہ وہ ایران اور متحدہ عرب امارات کے درمیان اس طرح کے تنازع کو تسلیم نہیں کرتا ہے۔

یہ تینوں جزائر ایرانی سرزمین کا ایک لازمی حصہ رہے ہیں اور اس بات کے برعکس کوئی بھی دعویٰ واضح طور پر مسترد کر دیا جائے گا۔

بہر حال ایران اچھی ہمسائیگی کے اصول پر احترام کرنے کو دکھانے کے لیے ہمیشہ ابو موسیٰ جزیرے پر کسی بھی غلط فہمی کو دور کرنے کے مقصد کیلیے متحدہ عرب امارات کے ساتھ دو طرفہ بات چیت کے لیے تیار ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@  

https://twitter.com/IRNAURDU1

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha