ایران میں غیر ملکی تجارت کا حجم 45 ارب ڈالر تک بڑھ گیا

تہران، ارنا- ایرانی کسٹم ادارے کے سربراہ نے کہا ہے کہ رواں شمسی سال کے ابتدائی 6 مہینوں کے اندر غیر ملکی تجارت کی شرح میں 47 فیصد کا اضافہ دیکھنے میں آیا ہے اور وہ 45 ارب ڈالر تک بڑھ گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق، "مہدی میر اشرفی" نے اسی عرصے کے دوران، غیر ملکی تجارت کی ترقی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پچھلے 6 مہینوں کے دوران، برآمدات کے فروغ کے ساتھ ساتھ غیر ملکی تجارت کی مالیت کی شرح 45 ارب ڈالر تک بڑھ گئی جس میں گزشتہ سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں 47 فیصد کا اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

ایرانی کسٹم ادارے کے سربراہ نے مزید کہا کہ اسی عرصے کے دوران، 79 ملین 100 ہزار ٹن مختلف قسم کی مصنوعات کی ایران اور دیگر ملکوں کے درمیان لین دین ہوئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پچھلے 6 مہینوں کے دوران، ایران نے 60 ملین ٹن مصنوعات کو دیگر ملکوں میں برآمد کی ہے جس کی مالیت کی شرح 21 ارب 800 ملین ڈالر ہے او اس میں گزشتہ سال کے  اسی عرصے کے مقابلے میں وزن کے لحاظ سے 30 فیصد اور مالیت کے لحاظ سے 61 فیصد کا اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

میراشرفی نے ستمبر میں درآمدی سامان کی کلیئرنس میں نئے کسٹم ریکارڈ کا رجسٹر کرنے کا اظہار کرتے ہوئے کہ اس مہینے میں 5 ملین 300 ہزار ٹن ضروری مصنوعات کی کلیئرنس ہوئی جن کی مالیت کی شرح 6 ارب 500 ملین ڈالر ہے۔

انہوں نے کہا کہ چین، عراق، ترکی، متحدہ عرب امارات اور افغانستان ایران کی درآمدی اور برآمدی مصنوعات کی سب سے بڑی پانچ منزلیں ہیں۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha