ویانا جوہری مذاکرات کا اگلے چند ہفتوں میں از سر نو آغاز ہوگا: ایرانی ترجمان

نیویارک، ارنا- ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے اس بات پر زور دیا کہ نیویارک میں 1+4 گروہ کے ارکان کے وزرائے خارجہ کی کوئی میٹینگ نہیں ہوگی اور ہر میٹنگ میں پہلے سے رابطہ اور ایجنڈے کی ترتیب درکار ہوتی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ جیسا کہ پہلے بھی کہا گیا ہے ویانا جوہری مذاکرات کا اگلے چند ہفتوں میں انعقاد کیا جاتا ہے اور اسے 1+4 گروہ کو بھی اطلاع دی گئی ہے۔

ان خیالات کا اظہار، "سعید خطیب زادہ" نے آج بروز منگل کو نیویارک میں تعینات ارنا نمائندے کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ ویانا جوہری مذاکرات کا اگلے چند ہفتوں میں انعقاد کیا جاتا ہے لیکن اس سے پہلے حکومت کی خارجہ پالیسی ٹیم کو مذاکرات سے متعلق اپنے حتمی نتائج اخذ کرنے کی ضرورت ہے۔

خطیب زادہ نے "ایران اور 1+4 گروہ کے وزرائے خارجہ کی ملاقات ایجنڈے پر ہے" کے جواب میں کہا کہ جوہری معاہدہ اور ویانا مذاکرات، یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ"جوزپ بورل" اور 1+4 کے وزرائے خارجہ کیساتھ دوطرفہ ملاقاتوں کے اہم موضوعات میں سے ایک ہیں۔

ایرانی محکمہ خارجہ نے کہا کہ لیکن ایران اور 1+4 گروہ کے وزرائے خارجہ کیلئے کوئی پہلے سے طے شدہ میٹنگ نہیں ہے اور نہ ہی یہ معلوم ہے کہ تمام 1+4 گروہ کے وزرائے خارجہ نیویارک میں ہیں۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha