کچھ پابندیوں کے باوجود ایرانی کھلاڑیوں کی کامیابی ان کے پختہ عزم  اور ارادے کی علامت ہے: آیت اللہ خامنہ ای

تہران، ارنا - ایرانی سپریم لیڈر حضرت آیت اللہ سید علی خامنہ ای نے ٹوکیو میں اولمپک اور پیرالمپک 2020 مقابلوں میں میڈلز حاصل کرنے والے ایرانی کھلاڑیوں سے ملاقات ميں کہا کہ اولمپک اور پیراولمپک مقابلوں میں آپ کی کامیابی درحقیقت عالمی سطح پر ان کے پختہ عزم اور مضبوط ارادے کی علامت ہے۔

 یہ بات ایرانی قائد انقلاب سید علی خامنہ ای سے آج بروز ہفتہ حسینیہ امام خمینی (رہ) میں ٹوکیو اولمپک اور پیرالمپک 2020 میں میڈلز حاصل کرنے والے کھلاڑی ملاقات کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہی۔

  یہ ملاقات حسینیہ امام خمینی (رہ) میں طبی پروٹوکولز کی تعمیل کے ساتھ ہے۔

آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے فرمایا کہ اولمپک اور پیراولمپک مقابلوں میں آپ کی کامیابی درحقیقت عالمی سطح پر آپ کی ہمت، نشاط اور استقامت پر مبنی اہم پیغام ہے۔

ایرانی سپریم لیڈر نے عالمی سطح پر کامیابی کے پیغامات  کو معاشرے کے جوانوں اور نوجواں کے لئے بھی اہم قراردیتے ہوئے کہا کہ ان پیغامات کا تعلق دل کی گہرائیوں سے ہے اور ہم اس کی قدر و قیمت کو اچھی طرح جانتے ہیں۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے بعض پابندیوں اور محدودیتوں کے باوجود عالمی سطح پر ایران کے پرچم کو کامیابی کے ساتھ لہرانے کا حوالہ دیتے ہوئے فرمایاکہ آپ نے پابندیوں کے باوجود ملک کے پرچم کو عالمی پلیٹ فارمز پر بلند کیا یہ آپ کے مضبوط و مستحکم ارادے اور خلاقیت کا مظہر ہے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی نے ایرانی خواتین کی طرف سے ٹوکیو مقابلوں میں باحجاب شرکت کرنے اور میڈلز حاصل کرنے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ایرانی خواتین نے ثابت کردیا ہے کہ حجاب ان کی ترقی اور پیشرفت میں رکاوٹ نہیں ہے۔

انہوںنے کہا کہ ایران کی باپردہ اور باحجاب خواتین کھلاڑی آج دیگر اسلامی ممالک کی خواتین کھلاڑيوں کے لئے بھی بہترین نمونہ ہیں اور آج 10 ممالک کی مسلمان خواتین حجاب کے ساتھ عالمی کھیلوں میں شرکت کرتی ہیں۔

ایرانی سپریم لیڈر نے اسرائيل کی طرف سے عالمی مقابلوں میں شرکت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے فرمایا کہ اسرائیل کی غاصب حکومت عالمی سطح پر اپنے لئے قانونی جواز تلاش کرنے کی کوشش کررہی ہے اور اس سلسلے میں کھیل کے میدان سے بھی استفادہ کررہی ہے اور اسے اس سلسلے میں عالمی سامراجی طاقتوں کی حمایت بھی حاصل ہے، لیکن ایران نے عالمی سطح پر واضح کردیا ہے کہ وہ اسرائيل کی غاصب ، ناجائز اور نامشروع حکومت کو کھیل کے میدان میں بھی تسلیم نہیں کرتا اور یہی وجہ ہے کہ ایرانی کھلاڑی اسرائيل کے ساتھ مقابلہ کرنے کے لئے تیار نہیں ، لہذا ایران کے کھیل کے حکام کو بھی اس موضوع پر خاص توجہ مبذول کرنی چاہیے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURDU1

قابل ذکر  ہے کہ جاپان کے دارالحکومت ٹوکیو میں ایران کے اولمپک دستے نے 7 میڈلز حاصل کئے جن میں 3 سونے کے ، 2 چاندی کے اور 2 کانسی کے تمغے شامل ہیں۔ ایرانی پیرالمپک قافلے نے بھی 24 میڈلز حاصل کئے جن میں 12 سونے کے، 11 چاندی کے اور 1 کانسی کا تمغہ شامل ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURDU1

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha