ایرانی صدر کا بھارتی وزیر خارجہ سے تبادلہ خیال

دہلی نو- ارنا- بھارتی وزیر خارجہ "جے شنکر" نے جمعہ کے روز ایک ٹوئٹر پیغام میں کہا ہے کہ انہوں نے تاجکستان میں منعقدہ شنگھائی تعاون تنظیم کے سربراہی اجلاس کے موقع پر، ایرانی صدر سے مختصر ملاقات کی ہے۔

اکانومک ٹائمز کے مطابق، بھارتی وزیر خارجہ نے ایرانی صدر کیساتھ اپنی حالیہ ملاقات کی تصاویر کو شئیر کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے شنگھائی سربراہی اجلاس کے آغاز سے پہلے علامہ رئیسی سے ایک مختصر ملاقات کی اور ان سے بعض مسائل پر تبادلہ خیال کیا۔

یہ جے شنکر کی علامہ رئیسی سے دوسری ملاقات ہے؛ پچھلے انہوں نے ایرانی صدر کی تقریب حلف برداری میں بھارت کے نمائندے کی حیثیت سے ایران کا دورہ کرتے ہوئے علامہ رئیسی سے ملاقات کی تھی۔

نیز ایرانی وزیر خارجہ  "حسین امیرعبداللہیان" نے شنگھائی سرابراہی اجلاس کے موقع پر باہمی ملاقاتوں کے سلسلے میں جمعرات کی رات کو بھارت کے وزیر خارجہ سے ملاقات کی۔

اس موقع پر انہوں نے دونوں ملکوں کے درمیان تاریخی اور گہرے تعلقات سمیت تعاون بڑھانے کے بنیادی ڈاھنچوں کی موجودگی کا ذکرکرتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، بھارت سے کثیر الجہتی تعاون بڑھانے پر تیار ہے۔

دراین اثنا بھارتی وزیر خارجہ جے شنکر نے دونوں ملکوں کے درمیان تاریخی تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا کہ ان کا ملک ایران سے باہمی تعاون بڑھانے پر تیار ہے۔

انہوں علاقائی چیلنجز اور خاص طور افغان مسئلے سے متعلق، ایران اور بھارت کے درمیان مزید مشاورت کا مطالبہ کیا۔

بھارتی وزیر خارجہ نے مشترکہ اقتصادی کمیشن کے انعقاد کی تیاری کا اعلان کرتے ہوئے تعاون بڑھانے کیلئے نئی دہلی کی تیاری پر زور دیا۔

واضح رہے کہ شنگھائی تعاون تنظیم کے 21 ویں اجلاس کا آج بروز جمعہ کو اس تنظیم کے 12 مستقل اور مبصر رکن کے سربراہوں بشمول اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر مملکت کی شرکت سے تاجکستان کے دارالحکومت دوشنبہ میں انعقاد کیا گیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha