ایران باضابطہ طور پر شنگھائی تعاون تنظیم کا مستقل رکن بن گیا

تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران باضابطہ طور پر شنگھائی تعاون تنظیم کا مستقل رکن بن گیا۔

رپورٹ کے مطابق، اسلامی جمہوریہ ایران اب تک شنگھائی تعاون کا مبصر رکن تھا لیکن آج بروز جمعہ کو اس تنظیم کے 21 ویں سربراہی اجلاس میں وہ ایس سی او کا مستقل رکن بن گیا۔

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر علامہ "سید ابراہیم رئیسی" نے بھی آج مطابق 17 ستمبر کو اس اجلاس میں تقریر کرتے ہوئے ایران کا اس تنظیم کے مستقل رکن بننے پر شنگھائی تعاون تنظیم کے اراکین کا شکریہ ادا کرتے ہوئے اس امید کا اظہار کرلیا کہ ایس سی او اپنی ترقی کی راہ پر گامزن ہوتے ہوئے بہت کم عرصے کے دوران خطے اور دنیا میں ایک اعلی مقام حاصل کرے گی۔

نیز بھارتی وزیر اعظم "نریندر مودی" نے شنگھائی تعاون تنظیم کے 21 ویں سربراہی اجلاس میں ورچوئل تقریر کرتے ہوئے اس تنظیم میں ایران کی مستقل رکنیت پر مبارکباد دی۔

واضح رہے کہ شنگھائی تعاون تنظیم کے 21 ویں اجلاس کا آج بروز جمعہ کو اس تنظیم کے 12 مستقل اور مبصرکن کے سربراہوں بشمول اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر مملکت کی شرکت سے تاجکستان کے دارالحکومت دوشنبہ میں انعقاد کیا گیا۔

اس علاقائی اجلاس جو تاجکستان کی میزبانی میں انعقاد کیا جا رہا ہے، میں تاجکستان کے صدر سمیت کرغیزستان، قازقستان، بیلاروس، پاکستان، ترکمانستان اور ازبکستان کے سربراہوں نے حصہ لیا ہے۔ نیز روس، چین، بھارن اور منگولیا کے صدور نے اس اجلاس میں ورچوئل حصہ لیا ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha