ایرانی صوبے فارس عمان کے ہیلتھ ٹورازم کی منزلوں میں سے ایک ہے

شیراز، ارنا- ایرانی صوبے فارس کے ڈائریکٹر مینجر برائے ثقافت، سیاحت اور دستکاری مصنوعات کے امور نے عمانی پارلیمنٹ کے رکن "محمد البلوشی" سے ایک ملاقات کے دوران، کہا ہے کہ فارس عمان کے ہیلتھ ٹورازم کے مقامات میں سے ایک ہے اور اس صوبے کی ترجیح بھی اس بات پر توجہ دینی ہے۔

رپورٹ کے مطابق، شیراز میں منعقدہ اس ملاقات میں "ہادی شہ دوست شیرازی" نے عمان سے ہیلتھ ٹورازم کے مزید تعاون کے طریقوں کا جائزہ لیتے ہوئے کہا کہ عمان ہیلتھ ٹورازم کے شعبے میں صوبہ فارس کے مقاصد میں سے ایک ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہیلتھ ٹورازم، سیاحت کے میدان میں صوبہ فارس کی صلاحیتوں میں سے ایک ہے جس پر حالیہ برسوں میں مزید توجہ دی گئی ہے اور یہ صوبہ فارس کے ثقافتی ورثہ، سیاحت اور دستکاری امور کے جنرل ڈائریکٹوریٹ کے پروگراموں کی ترجیحات میں ہے۔

شہ دوست نے کہا کہ صوبہ فارس اور شہر شیراز، خلیج فارس کے علاقے میں پڑوسی ممالک کے اہم سفری مقامات میں سے ایک ہے، جو ٹرانسپلانٹ، آنکھ، جلد، بالوں اور خوبصورتی سرجری کے شعبوں میں نمایاں ہے۔

انہوں نے کہا کہ مریضوں کی سروس تک رسائی، رہائش اور فلاحی انفراسٹرکچر بنانے کے عمل کو آسان بنانے سے ان کی صوبے فارس میں رخ کرنے کو دوگنا کر سکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ طبی پروفیسرز اور ماہرین سے فائدہ اٹھانا، فارس کی صلاحیتوں میں سے ایک ہے جس سے مریض واقف ہیں۔ تاہم، ان سہولیات اور شاندار سائنسی اور طبی وسائل کے استعمال کے نقطہ نظر میں تبدیلی اور ضروری انفراسٹرکچر کی تشکیل اور عمل درآمد کرنے والی ایجنسیوں کیساتھ بات چیت کی ضرورت ہے۔

ایرانی صوبے فارس کے ڈائریکٹر مینجر برائے ثقافت، سیاحت اور دستکاری مصنوعات کے امور نے کہا کہ بیماروں کی ترجیحات کے مطابق مناسب طبی مراکز کا قیام، ایک اہم مسئلہ ہے۔

شہ دوست شیرازی نے کہا کہ کچھ لوگ غیر سرکاری اور غیر پیشہ ورانہ طور پر طبی اور صحت کے سیاحوں کو کچھ نامناسب خدمات فراہم کرتے ہیں۔ ایسے لوگوں کی غیر سرکاری کارروائی قابل قبول نہیں ہے اور اس میدان میں بہت سے تربیت یافتہ لوگ ہیں جن کی حمایت کرنی ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ صحت اور طبی سیاحوں کے لیے خدمات مقررہ قانونی فریم ورک کے اندر فراہم کی جانی ہوگی تاکہ کسی مسئلے کی صورت میں ہم اسے حل کرنے کیلئے کارروائی کر سکیں۔

دراین اثنا عمانی پارلیمنٹ کے رکن نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ ان کا ملک ہیلتھ ٹورازم کے شعبے میں دوطرفہ تعاون بڑھانے پر تیار ہے اور سیاحت کے شعبے میں سرگرم ایرانی کمپنیاں، عمان میں آسانی سے سرمایہ کاری کر سکتی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ عمان کے لوگوں کا صوبہ فارس اور شہر شیراز پر ایک خاص نگاہ اور اعتماد ہے اور اسی وجہ سے وہ اس صوبے کے طبی دورے کرنے کو ترجیح دیتے ہیں۔

عمانی پارلیمنٹ کے نمائندے نے شیراز سے مسقط اور اس کے برعکس پروازوں کو بڑھانے کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ شیراز میں کمپنی کے قیام سے خاص طور پر سیاحت کے میدان میں مختلف صنعتوں میں سرمایہ کاری کے مواقع  پیدا ہوں گے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha