ایشین اولمپک کونسل نے ایرانی قومی اولمپک کمیٹی کی تعریف کی

تہران، ارنا- ایشین اولمپک کونسل کے ایگزیکٹو بورڈ کے غیر معمولی اجلاس کا انعقاد کیا گیا جس میں افغان کیھلاڑیوں کی مدد کرنے پر ایران کی قومی اولمپک کمیٹی کے اقدامات کو سراہا گیا۔

رپورٹ کے مطابق، اس ورچوئل اجلاس کی صدارت او سی اے کے صدر "راجہ رندیر سنگھ"، انٹرنیشنل سوئمنگ فیڈریشن کے صدر اور ایشین اولمپک کونسل کے ڈائریکٹر جنرل "حسین المسلم"، ایران کی قومی اولمپک کمیٹی کے صدر اور او سی اے ایگزیکٹو بورڈ کے رکن "سید رضا صالحی امیری" اور دیگر ارکان نے کی۔

اجلاس کا آغاز ایشیا کی مختلف کمیٹیوں کی رپورٹوں کے جائزے سے ہوا۔ ابتدا میں ہانگجو 2022 ایشین گیمز آرگنائزنگ کمیٹی نے کھیل دستوں کے سربراہوں کیساتھ اپنی حالیہ ملاقات کے بعد ایک  رپورٹ پیش کرتے ہوئے چین اور گیمز کے میزبان شہر کی مکمل تیاری پر زور دیا۔

نیز ہانگ ژو گیمز آرگنائزنگ کمیٹی کی رپورٹ میں پائلٹ ایونٹس کیلئے مقامات کی تعمیر اور آپریشن میں 90 فیصد پیش رفت کو بھی اجاگر کیا گیا۔

اس کے بعد، ایشین اولمپک کونسل اور اس کے ایگزیکٹو بورڈ کے ارکان نے ایران کی قومی اولمپک کمیٹی کیجانب سے افغان کیھلاڑیوں کے داخلے کے اجازت نامے جاری کرنے کیلئے ملکی سرحدوں کو دوبارہ کھولنے اور دیگر متعلقہ ایجنسیوں کیساتھ ہم آہنگی کو سراہا۔

در این اثنا صالحی امیری نے کہا کہ اب تک، ہم نے قومی اولمپک کمیٹی کے پیشہ ورانہ فرائض کے مطابق افغان اسپورٹس کمیونٹی کیساتھ ساتھ متعدد افغان کیھلاڑیوں کو انٹری ویزا جاری کرنے کے اخلاقی اور انسان دوستانہ مشن کی حمایت کی ہے، اور اس مدد میں آئی او سی اور او سی اے کے تعاون سے مزید اضافہ ہوگا۔

ایرانی قومی اولمپک کمیٹی کے سربراہ نے اجلاس میں حصہ لینے والوں کو مخاطب کرتے ہوئے او سی اے ایگزیکٹو بورڈ کے اگلے اجلاس کی میزبانی کیلئے ایران کی تیاری کے سلسلے میں عوامی ویکسینیشن کو تیز کرنے کی ضرورت اور ملک میں کووڈ 19 کے مریضوں کے گرتے ہوئے رجحان پر زور دیتے ہوئے کہا کہ معاشرے کے مختلف طبقات میں ویکسین کی وسیع پیمانے پر تقسیم کی وجہ سے، ہم اب بھی ایشین اولمپک کونسل کے ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس کی میزبانی کیلئے تیار ہیں اور ممبران سے اس حوالے سے اپنی تیاری اور حمایت کا اظہار کرنے کی توقع ہے۔

انہوں نے کہا کہ عالمی یوتھ والی بال چیمپئن شپ کا انعقاد، ایران کی میزبانی کیلئے تیار رہنے کی بہترین مثالوں میں سے ایک ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha