جنوبی کوریا کے صدر کے خصوصی نمائندے نے جوہری معاہدے کی حمایت کی

تہران، ارنا- جنوبی کوریا کے صدر کے خصوصی نمائندے اور محکمہ خارجہ کے قائم مقام نے جوہری معاہدے کے نفاذ کو تمام ممالک بالخصوص کوریا کے مفادات میں قرار دے کر اس عزم کا اعادہ کیا کہ ان کا ملک اس معاہدے کی حمایت کرتا رہتا ہے۔

"چوی جونگ کان" جو نئے ایرانی صدر کی تقریب حلف برداری میں حصہ لینے کیلئے ایران کا دورہ کیا ہے، نے آج بروز بدھ کو نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے سیاسی امور "سید عباس عراقچی" سے ایک ملاقات کے دوران، ان سے باہمی تعلقات اور جوہری معاہدے پر بات چیت کی۔

اس موقع پر چوی نے جوہری معاہدے کے نفاذ کو تمام ممالک بالخصوص کوریا کے مفادات میں قرار دے کر اس عزم کا اعادہ کیا کہ ان کا ملک اس معاہدے کی حمایت کرتا ہے۔

 در این اثنا عراقچی نے باہمی تعلقات کی راہ میں حائل رکاوٹیں بشمول کورین بینکوں میں ایرانی زر مبادلے کو منجمد کرنے پر تبصرہ کرتے ہوئے جوہری مذاکرات اور اس مسئلے کے درمیان ہر کسی طرح کے تعلقات کو غیر قابل قبول قرار دیتے ہوئے اسے امریکیوں کیجانب سے اس مسئلے سے سیاسی فائدہ اٹھانے کی علامت قرار دے دیا۔

 اس موقع پر چوی نے 6 مہینوں میں کم وقت میں اپنے تین دورہ ایران پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ جنوبی کوریا کیجانب سے اسلامی جمہوریہ ایران سے تعلقات کے فروغ کی علامت ہے اور جنوبی کوریا کی حکومت باہمی تعلقات کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کی ہر ممکن کوشش کرے گی۔

انہوں نے اس امید کا اظہار کردیا کہ علامہ رئیسی کے دوران صدارات میں، دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات، باہمی مفادات پر مبنی ہوں۔

چوی نے اس امید کا اظہار کردیا کہ جنوبی کوریا کی حکومت مستقل قریب میں سیول میں نئے ایرانی وزیر خارجہ کی میزبانی کرے گی۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha