ایرانی اسپیکر کا ایران اور شام کے نجی شعبوں کے درمیان تعاون کے فروغ پر زور

تہران، ارنا- شام کے دورے پر آئے ہوئے ایرانی اسپیکر نے دونوں ملکوں کے درمیان مختلف سیاسی، اقتصادی، تجارتی اور صنعتی میدان میں نجی شعبوں کے درمیان تعاون بڑھانے پر زور دیا۔

رپورٹ کے مطابق، "محمد باقر قالیباف" نے آج بروز بدھ کو اپنے شامی ہم منصب "حمودہ صباغ" سے ملاقات اور گفتگو کی۔

اس موقع پر قالیباف نے ایران اور شام کی مزاحمتی فرنٹ کیخلاف فوجی اور سیکورٹی جنگ میں دہشتگردوں، امریکہ اور صہیونی ریاست کی شکست کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ دشمن عناصر نے حالیہ صورتحال میں ایران اور شام کیخلاف معاشی جنگ عائد کی ہے لہذا تہران اور دمشق کو نجی شعبے خصوصا بازرگانوں، تاجروں اور صنعت کاروں کی مدد کرکے دونوں ممالک کے درمیان دو طرفہ اقتصادی اور تجارتی تعلقات کو فروغ دینا ہوگا۔

انہوں نے مختلف سیاسی، دقفعی، سیکورٹی، اقتصادی، ثقافتی اور معاشرتی شعبوں میں تہران اور دمشق کے بڑھتے ہوئے تعلقات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان ہم آہنگی اور تعلقات کی مضبوطی کی سب سے اہم وجہ یہ ہے کہ ایران اور شام، اسلامی امت کے وقار اور سلامتی کے دفاع میں سب سے آگے ہیں؛ آج اسلامی معاشرے کے مشتر ہ دشمن کے سرغنہ امریکہ اور ناجائز صہیونی ریاست ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ان کے اس دورے کے سب سے اہم مقاصد میں سے ایک یہ ہے کہ دونوں ملکوں کے نجی شعبے کو ایران اور شام کے درمیان تجارت، صنعت اور زراعت کے مختلف شعبوں میں اقتصادی اور تجارتی تعلقات بڑھانے میں مثبت کردار ادا کرنے میں مدد کریں۔

قالیباف نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی لین دین کی سطح قابل قبول نہیں ہے اور دونوں پارلیمانوں کا فرض ہے کہ معاشی اور اقتصادی تعلقات بڑھانے  کے راستے کو ہموار کرنے کی کوشش کریں۔

اس موقع پر حمودہ عباس نے کہا کہ ایران اور شام کی مضبوط تعلقات دونوں ممالک کے مرحوم رہنماؤں جناب حافظ الاسد اور حضرت امام خمینی (رح) کے مرہوں منت ہیں جو اب بہت اعلی سطح پر ہیں اور دونوں ممالک ایک دوسرے کے ساتھ اچھی ہم آہنگی میں ہیں۔

انہوں نے اس امید کا اظہار کردیا کہ دونوں مممالک، دہشتگردی کیخلاف جنگ میں کامیابی کی طرح اقتصادی تعلقات بڑھانے اور پابندیوں کے مشکلات پر قابو پالینے میں کامیابی حاصل کر سکیں گے۔

**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha