ہمیں امید ہے کہ تیونس جلد از جلد اس نازک مرحلے سے گزر جائے گا: ایران

تہران، ارنا- ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے تیونس میں سیاسی اور سیکورٹی کے شعبوں میں قیام استحکام کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کیا کہ تیونس مذاکرات کے ذریعے جلد از جلد اس نازک صورتحال پر قابو پا لے گا۔

ان خیالات کا اظہار "سعید خطیب زادہ" نے آج بروز منگل کو تیونس کی حالیہ تبدیلیوں کے رد عمل میں کیا اور کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران تیونس کی حالیہ تبدیلیوں کا قریب سے جائزہ لے رہا ہے۔

ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے تمام فریقین کو صبر و تحمل کا مظاہرہ کرنے کی دعوت دیتے ہوئے موجودہ تناؤ سے نکلنے اور تیونس کی انقلابی قوم کی امنگوں کو پورا کرنے کیلئے ملک کے تمام گروہوں اور اداروں کے مکالمے پر زور دیا۔

انہوں نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اس مشکل حالات میں تیونس کیساتھ شانہ بشانہ کھڑا ہے۔

ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے تیونس میں سیاسی اور سیکورٹی کے شعبوں میں قیام استحکام کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کیا کہ تیونس مذاکرات کے ذریعے جلد از جلد اس نازک صورتحال پر قابو پا لے گا۔

واضح رہے کہ تیونس میں اتوار کے روز حکومت مخالف پر تشدد مظاہروں کا آغاز شروع ہوا جس میں ہزاروں لوگوں نے شرکت کی ، صورتحال دیکھتے ہوئے  صدر قیس سعید نے وزیر اعظم ہشام مشیشی کو برطرف کر دیا۔

سدر قیس سعید کے مطابق وہ ایک نئے چیف کی سربراہی والی حکومت کی مدد سے انتظامی امور خود دیکھیں گے جبکہ نئے چیف کی تقرری بھی خود کریں گے۔

**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha