خطے کے دوسرے ممالک کے مقابلے میں ایران کی اقتصادی ترقی زیادہ ہے

تہران، ارنا- ورلڈ بینک کے اعدادوشمار کے مطالعے سے پتہ چلتا ہے کہ اگرچہ 2020 میں کورونا وائرس کے پھیلنے کی وجہ سے خطے کے بیشتر ممالک کی معاشی ترقی منفی ہوگئی تھی، لیکن کورونا کے دوران سخت ترین پابندیوں کو برداشت کرنے کے باوجود ایران کی معاشی ترقی مثبت ہوگئی۔

انہوں نے کہا کہ پچھلے تین سالوں میں جوہری معاہدے سے امریکہ کی علیحدگی اور معاشی جنگ کے آغاز کے بعد سے ، ایران کی معاشی نمو میں بہت سی تبدیلیاں آئی ہیں۔

پچھلے دو سالوں میں کورونا وائرس کا پھیلاؤ بھی ان مسائل کے فروغ کا باعث ہوا ۔ اس طرح پابندیوں اور کورونا کے دو عوامل نے ملکی معیشت کو مختلف طریقوں سے مسائل کا شکار کیا۔

2017 میں ، ڈونلڈ ٹرمپ کی حکومت کے آغاز اور جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی کے وہی آغاز سے ایران کی معاشی نمو ، جو سنہ 2016 میں 12.5فیصد تک پہنچ گئی تھی 3.7 فیصد کمی آئی۔  اور 2018 اور 2019 میں  بالترتیب  4.8٪ اور 7٪کمی دیکھنے میں آئی۔

لیکن تمام تر دباؤ ، کورونا اور پابندیوں کے باوجود گذشتہ سال ملک کی معاشی نمو مثبت ہوگئی۔ یہ نکتہ اتنا اہم تھا کہ ایرانی صدر نے دو روز پہلے مرکزی بینک کے اجلاس میں اپنی تقریر میں اس پر زور دیا۔

سنٹرل بینک کی تازہ ترین رپورٹ کے مطابق 1399 میں ملک کی معاشی نمو گذشتہ سال کے مقابلے میں بالترتیب 3.6 فیصد اور 2.5 فیصد تھی۔

اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURDU1

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha