25 جولائی، 2021 3:13 PM
Journalist ID: 2393
News Code: 84415478
0 Persons
گذشتہ سال معاشی ترقی 3.6فیصد ہوگئی: چیف ایرانی سنٹرل بینک

تہران ، ارنا - سنٹرل بینک کے سربراہ نے کہا ہے کہ گذشتہ سال پابندیوں کے اثرات پر قابو پانے کے اقدامات کے سبب معاشی نمو اور جی ڈی پی کی شرح نمو بالترتیب 3.6 فیصد اور 2.5 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔

یہ بات اکبر کمیجانی نے آج بروز اتوار سنٹرل بینک کی 61 ویں سالانہ جنرل میٹنگ میں گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

1392 سے 1399 سالوں میں اقتصادی ترقی کی تبدیلیوں کا مطالعہ ، اس متغیر کا اتار چڑھاو اور معاشی حالات پر اس کے اثرات کو ظاہر کرتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ 11 ویں حکومت کے آغاز(1391 میں) میں معاشی نمو کی شرح 7.7 فیصد تھی جو تک پہنچ گئی تھی۔ نئی معاشی پالیسیاں اپنانے کے بعد 1393 میں جی ڈی پی کی نمو کی شرح3.2 فیصد تک پہنچ گئی۔

ایرانی سینٹرل بینک کے سربراہ نے کہا کہ 1394 میں تیل کی قیمتوں اور تیل کی آمدنی میں نمایان کمی کی وجہ سے ،معاشی نمو 1.6 فیصد ہوگئی لیکن 1395 کو جوہری معاہدے کے نفاذ اور خارجہ تجارت کی کارکردگی کی بہتری کے ساتھ معاشی نمو کی شرح 1395 اور 1396 کے سالوں میں بالترتیب12.5  اور 3.7فیصد ہوگئی۔

کمیجانی نے بتایا کہ انہوں نے 8مئی 2018 میں جوہری معاہدے سے امریکی حکومت کی دستبرداری ،جابرانہ معاشی پابندیوں کی دوبارہ واپسی اور غیر ملکی مالی و تجارتی تبادلوں کے راستے پر عائد رکاوٹوں کے ساتھ 1397 اور 1398 کے دوران جی ڈی پی کی شرح میں بالترتیب 5.4 اور6.5 فیصد کی کمی واقع ہوئی۔

اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURDU1

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha