صدر روحانی کی ہدایت سے گورہ- جاسک خام تیل کی منتقلی لائن منصوبے کا افتتاح

تہران، ارنا- ایرانی صدر مملکت نے ایک ویڈیو کانفرنس کے ذریعے علاقے گورہ سے جاسک تک خام تیل کی منتقلی لائن سمیت مکران علاقے میں تیل برآمدی ٹرمنیل کے منصوبوں کے نفاذ کی ہدایت دی۔

رپورٹ کے مطابق، گورہ سے جاسک تک خام تیل کی منتقلی کی لائن، تاریخ میں پہلی بار، ہمارے ملک کی تیل برآمدات کو آبنائے ہرمز سے گرزنے کی ضرورت کے بغیر قابل بناتی ہے  جس میں پہلے مرحلے میں روزانہ 300 ہزار بیرل خام تیل کی ترسیل کی گنجائش موجود ہے۔

ایران کیخلاف امریکی جابرانہ پابندیوں کی وجہ سے اس پائپ لائن کی تعمیر کیلئے پہلی بار  ملک کے ماہرین نے ایک ہزار کلومیٹر سنکنرن سے بچنے والی پائپیں تعمیر کی ہیں۔

نیز ھٹا سروس کیساتھ مطابقت پذیر 2.5 میگاواٹ کے بڑے پمپوں کو ملک میں پہلی بار بنایا گیا اور اس پائپ لائن میں استعمال کیا گیا ہے۔

اس ٹرانسمیشن لائن کی تعمیر کے دوران، ایرانی ماہرین نے مکران کے ساحل پر خام تیل لوڈ کرنے کیلئے ایکسپورٹ ٹرمینل اور ایک تیرتی گیند بنائی اور 5 بشار ، فارس، ہرمزگان کے صوبوں اور  صوبے ہرمزگان کے بستاک اور میناب کے شہروں میں بھی 2 آرٹلری اسٹیشن بنائے گئے ہیں۔

اس پائپ لائن کی تعمیر کیلئے مجموعی طور پر 53 ہزار ارب تومان (ایرانی قومی کرنسی) کی سرمایہ کاری کی گئی ہے اور اس کے با ضابطہ نفاذ سے 10 ہزار افراد کیلئے روزگار کی فراہمی ہوگی۔

ایرانی وزیر تیل "بیژن زنگنہ" نے منعقدہ اس تقریب میں اس منصوبے اور اس کے نفاذ اور آپریشنل عمل کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ آج ایران کی تیل کی صنعت کا تاریخی دن ہے جس سے مکران خطے سے ایرانی خام تیل برآمد کرنے کا آپریشن شروع ہوگا۔

زنگنہ نے  کہا کہ 250 سے زیادہ کمپنیاں اس پروجیکٹ کے آپریشن میں شامل ہیں؛ ی ایک بہت بڑا قومی منصوبہ ہے جو معاشی جنگ کے مشکل حالات میں نافذ اور کام میں لایا گیا ہے؛ یہ پابندیوں کی ناکامی کا مظہر ہے جو مکران خطے کی معاشی ترقی کا پیش خیمہ ہوگا۔

دراین اثنا ڈاکٹر حسن روحانی نے اس منصوبے کو ایران کی صنعت کے اعزازات میں سے ایک قرار دیا اور کہا کہ آج ایرانی قومی کیلئے ایک عظیم اور تاریخی دن ہے جس کی اہمیت زمان گرزنے کیساتھ مزید محسوس ہوتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پوری دنیا کیلئے واضح ہے کہ ایران نے تیل کی برآمدات کے شعبے میں ایک بہت بڑا اقدام کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ خلیج فارس اور بحیرہ عمان سے باہر ایک تیل برآمدات ٹرمینل رکھنا، ہمارے لئے انتہائی قابل قدر اور اہم ہے اور میں اس حوالے سے تمام کمپنیوں، ماہرین اور دیگر متعلقہ اداروں اور افراد کی کوششوں کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha