ایران میں 16 ملین ڈالر سے زیادہ کیویار اور اسٹرجن گوشت کی برآمدات

تہران، ارنا- ایران فیشریز آرگنائزیشن تنظیم کے سربراہ برائے معیار کی بہتری، پروسیسنگ اور مارکیٹ کی ترقی کے امور نے کہا ہے کہ گزشتہ سال کے دوران، ملک میں 16 ارب ڈلر کی مالیت پر مشتمل کیویار اور اسٹرجن گوشت کو برآمد کیا گیا۔

ان خیالات کا اظہار "عیسی گلشاہی" نے آج بروز اتوار کو کیویار اور اس سے متعلق مصنوعات کی چھٹی نمائش کے دوران، گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پچھلے سال کے دوران، ملک میں مجموعی طور پر تیار کردہ 12 ٹن کیویار میں سے 5۔4 ٹن کو مختلف ممالک میں برآمد کیا گیا ہے جس کی مالیت کی شرح 6 ملین ڈالر ہے۔

گلشاہی نے مزید کہا کہ نیز گزشتہ سال کے دوران 3 ہزار 500 ٹن اسٹرجن گوشت کی تیاری کی گئی ہے جن میں سے ایک ہزار ٹن کو بیرون ملک میں برآمد کیا گیا جس کی مالیت کی شرح 10 ملین ڈالر ہے۔

در حقیقت اعداد و شمار کے مطابق ملک میں کہ تیار کرد کیویار کے تقریبا 45 فیصد کا بیرون ملک میں برآمد کیا جاتا ہے اور باقی 55 فیصد کا  ندروں ملک ہی میں استعمال کیا جاتا ہے۔

ایران فیشریز آرگنائزیشن تنظیم کے سربراہ برائے معیار کی بہتری، پروسیسنگ اور مارکیٹ کی ترقی کے امور نے کہا مزید کہا کہ ایران میں تیارکردہ کیویار کے 60 سے 65 فیصد تک کو یورپ میں برآمد کیا جاتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ بحیرہ کیسپین کے ممالک کے تازہ ترین اجلاس میں تجارتی اسٹرجن ماہی گیری پر پابندی کو 2021 تک بڑھا دی گئی ہے اور ہمیں امید ہے کہ اگلے اجلاسوں میں بھی اس کی از سر نو تجدید ہوگی۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha