ایران سے تمام شعبوں میں تعلقات کا سلسلہ جاری رہیں گے: آسٹرین صدر

لندن، ارنا- آسٹرین صدر نے ایک پیغام میں ایران کے تیرہوین صدراتی انتخابات میں علامہ سید ابراہیم رئیسی کی کامیابی پر مبارکباد دیتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا کہ ان مالک ایران سے تمام شعبوں میں باہمی تعلقات کا سلسلہ جاری رہے گا۔

رپورٹ کے مطابق، "الکساندر فان دربلن" نے ایک سرکاری پیغام میں علامہ رئیسی کو صدراتی انتخابات میں منتخب ہونے پر مبارکباد دیتے ہوئے ان کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کرلیا۔

انہوں نے ایران اور آسٹریا کے مابین 7 صدیوں کے دوستانہ تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے یقین دہانی کرائی کہ دونوں ممالک کے درمیان باہمی تعلقات تمام شعبوں میں جاری رہیں گے۔

ان کے پیغام کے کچھ حصے میں کہا گیا ہے کہ میں آپ کو یقین دلانا چاہتا ہوں کہ آسٹریا، ایران سے اپنے سیاسی، معاشی، ثقافتی اور سائنسی تعلقات کو جاری رکھے گا؛ اس کے علاوہ، میں اس بات پر بھی زور دینا چاہتا ہوں کہ آسٹریا، جوہری مذاکرات کی میزبان کی حیثیت سے اس حوالے سے بھر پور تعاون پر تیار ہے اور اس امید کا اظہار کرتا ہے کہ اس مذاکرات سے تعمیری نتیجہ نکلے گا۔

آسٹرین صدر نے علامہ رئیسی کی کامیابی کی خواہش کی اور اس امید کا اظہار کردیا کہ وہ ایرانی عوام کے ارمانوں کو پوری کرنے، دنیا سے اچھے تعلقات قائم کرنے، کشیدگی کا خاتمہ دینے، خطے میں قیام استحکام برقرار کرنے، اچھی معاشی صورتحال پیدا کرنے اور آزادی کے بنیادی حقوق کی ضمانت دینے میں کامیاب رہیں۔

خیال رہے کہ اب تک لاطینی امریکہ، روس، ترکی، عمان، شام، پاکستان، عراق، کویت، آرمینیا، ازبکستان، آذربائیجان اور متحدہ عرب امارات، چین، بھارت، افغانستان کے متعدد عالمی رہنماؤں نے صدارتی انتخاب میں رئیسی کی فتح پر مبارکباد دی۔

واضح رہے کہ ایرانی وزیر داخلہ "عبدالرضا رحمانی فضلی" نے ہفتے کے روز کو ایک پریس کانفرنس میں رائے شماری کے حتمی نتائج کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ 59 ملین، 310 ہزار 307 افراد انتخابات میں حصہ لینے کے اہل تھے جن میں سے 28 ملین 933 ہزار 4 افراد نے ووٹ دی۔

ایرانی وزیر داخلہ نے مزید کہا کہ تیرہویں صدراتی انتخابات میں ایرانی عوام کی ٹرن آوٹ 8۔48 فیصد ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ سید ابراہیم رئیسی، 17 ملین 926 ہزار 345 ووٹ حاصل کرکے ایران کے نئے صدر بن گئے۔ 

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha