ایرانی سپریم لیڈر کو عنقریب ملک میں تیار ویکسین سے ٹیکہ لگایا جائے گا

تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کی اکیڈمی آف میڈیکل سائنسز کے صدر نے کہا ہے کہ قائد اسلامی انقلاب کو عنقریب ملک میں تیار کورونا ویکسین سے ٹیکہ لگایا جائے گا۔

ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر "علیرضا مرندی" نے آج بروز جمعرات کو آیت اللہ خامنہ ای کے کاموں کے تحفظ اور اشاعت کے دفتر khamenei.ir سے انٹرویو دیتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایرانی وزHVJ صحت نے ملک میں تیار کردہ کوو برکت ویکسین کے استعمال کا جواز جاری کردیا ہے۔

ڈاکٹر مرندی نے کہا کہ قائد اسلامی انقلاب نے ملک میں تیار کردہ کورونا ویکسین کے استعمال پر بہت زور دیا تھا اور یہ ویکسین ایرانی نوجوان ماہریں کی دن رات کوششوں کا نتیجہ ہے جس میں اعلی سطحی امیونوجنسیٹی ہے۔

انہوں نے کہا کہ آیت اللہ خامنہ ای کو کورونا بحران کے آغاز سے ہی ویکسینیشن کا مسئلہ نہیں تھا، لیکن ان کے پاس ویکسینیشن کیلئے دو اہم شرطیں تھیں؛ سب سے پہلے، ان کی ویکسینیشن باری سے باہر نہیں کی جانی چاہئے اور دوسرا یہ کہ وہ صرف ایرانی ویکسین استعمال کریں گے۔

ڈاکٹر مرندی نے کہا کہ اسی وجہ سے  جب 80 سال سے زیادہ عمر کے ہم وطنوں کی ویکسینیشن شروع ہوئی تو انہوں نے غیر ملکی ویکسین لینے سے انکار کردیا اور ایرانی ویکسین کا انتظار کرنے لگے۔

واضح رہے کہ کوو برکت ویکسین نوجوان ایرانی محققین کے ذریعے تیار کی گئی جو ملکی یونیورسٹیوں سے فارغ التحصیل ہیں؛ اسلامی جمہوریہ ایران، بھارت، چین، برطانیہ، امریکہ اور روس کے بعد، دنیا کا چھٹا ملک اور مغربی ایشیاء کا پہلا ملک ہے جس میں کورونا ویکسین کی تیاری کی صلاحیت ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha