ایران کا پولنگ اسٹیشنوں کے تخفظ میں برطانوی پولیس کی کوتاہیوں کیخلاف احتجاج

لندن، ارنا- برطانیہ میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے ناظم الامور نے برطانوی محکمہ خارجہ کو لکھے گئے ایک خط میں 18 جون کے صدراتی انتخابات میں بعض شہروں بشمول برمنگھم پولنگ اسٹیشنوں کے تخفظ میں برطانوی پولیس کی کوتاہیوں و نیز ایرانی ووٹرز کیخلاف تشدد کی عدم روک تھام کیخلاف احتجاج کیا۔

ان خیالات کا اظہار "سید مہدی حسینی متین" نے اپنے ٹوئٹر اکاونٹ میں جاری کردہ ایک پیغام کے ذریعے کیا۔

انہوں نے کہا کہ ایرانی سفارتخانے نے برطانوی محکمہ خارجہ سے مطالبہ کیا کہ وہ اس حادثے میں ملوثیں کی شناخت و نیز ان کی سزا دینے کے فوری اقدامات اٹھائیں۔

حسینی متین نے کہا کہ اس کے علاوہ برطانوی محکمہ خارجہ کو زخمی ہونے والوں کے و نیز اسلامی جمہوریہ ایران کے سفارتی مقامات پر پہنچے گئے نقصانات کا ازالہ کرنا ہوگا۔

واضح رہے کہ اس سے پہلے تہران میں تعینات برطانوی سفیر کو محکمہ خارجہ میں طلب کرکے برطانیہ میں مقیم ایرانی شہریوں کی پولنگ کے عمل کو مسائل کا شکار کرنے پر احتجاج کیا گیا۔

اس حوالے سے ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ برطانیہ میں لندن اور برمنگھم سمیت کچھ برطانوی شہروں میں 13 ویں صدارتی انتخابات میں خلل ڈالا گیا جس میں ووٹروں اور ایگزیکٹو ایجنٹوں کی توہین اور انقلابی اور جمہوری مخالف دہشت گرد عناصر کے ذریعے ایک ووٹر کی پٹائی بھی گئی؛ تو ہم ان اقدامات کے رد عمل میں آج بروز ہفتے کو ایران میں تعنیات برطانوی سفیر" راب مک" کو محکمہ خارجہ میں طلب کرکے برطانیہ میں مقیم ایرانی شہریوں کی پولنگ کو مسائل کا شکار کرنے پر احتجاج کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ برطانوی سفیر کو بتایا گیا کہ برطانوی حکومت اور پولیس، پولنگ اسٹیشنوں اور ووٹرز کی حفاظت کو یقینی بنانے میں اپنی ذمہ داری میں ناکام تھی۔

نیز برطانوی سفیر کو کہا گیا کہ گلیوں میں چند فسادیوں کی نقل و حرکت میں نہیں بلکہ بیلٹ باکس پر جمہوریت حاصل ہوتی ہے۔

ایرانی محکمہ خارجہ نے کہا کہ اس اجلاس میں بی بی سی فارسی اور ایران انٹرنیشنل سمیت برطانیہ میں مقیم فارسی زبان کے میڈیا کے مذموم اور منافقانہ اقدامات پر بھی کڑی تنقید کی گئی؛ جس نے اپنے پروگراموں اور مختلف قسم کی خبروں سے انتخابی بائیکاٹ کو مستحکم کرنے کی کوشش کی، جس سے لوگوں کو سڑکوں پر احتجاج کرنے کی ترغیب دی گئی اور جمہوری عمل کیخلاف یہ اقدامات اور ہنگامہ آرائی کی تحریکوں کی حوصلہ افزائی ایرانی عوام کی یاد میں ریکارڈ کی جائے گی۔

اس موقع پر تہران میں تعنیات برطانوی سفیر نے کہا کہ وہ ایرانی احتجاج کو لندن تک پہنچادیں گے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha