ایران میں مذہبی اقلیتوں کے حقوق کا احترام کیا جاتا ہے: تہران کے آرچ بشپ

تہران، ارنا- تہران کی آرمینیائی برادری کے آرچ بشپ نے کہا ہے کہ ہونے والی کوششوں سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران میں کوئی امتیازی سلوک نہیں ہے اور اس میں مذہبی اقلیتوں کے تمام حقوق کا احترام کیا جاتا ہے۔

ان خیالات کا اظہار "سبو سرکیسیان" نے آج بروز بدھ کو تہران کے ڈسٹرکٹ 14 اور دولاب اسکوائر اور سینکوری کے شہری انتظام کے منصوبوں کے نفاذ کی تقریب کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ کچھ عرصہ پہلے تک "تہران میں آرمینیائی برادری کا قبرستان" بد نظمی کا شکار تھا اور مقبرے گھاس کے نیچے دفن کیے گئے تھے لیکن اب ہم اس کی بحالی کا شکرگزار ہیں۔

تہران کے آرچ بشپ نے کہا کہ اس قبرستان میں وہ افراد آرام لیتے تھے جنہوں نے اپنی جان کو مادر وطن کے دفاع میں قربان کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ تہران میونسپلٹی، شہری کونسل اور سرکاری عہدیداروں کی کوششوں کی بدولت اب یہ قبرستان، ایک سیاحتی مرکز میں تبدیل ہوگیا جو انتہائی فخر کی بات ہے۔

آرمینیائی برادری کے آرچ بشپ نے کہا کہ اس بات سے یہ ظاہر ہوتی ہے کہ ایران، گزشتہ عرصوں سے اب تک مختلف ادیان کا اچھا میزبان رہا ہے۔

انہوں نے علاقے دولاب میں واقع آرمینیائی برادری کے قبرستان کی بحالی کو مسلمانوں اور عیسائیوں کے درمیان مکالمے کے فروغ کے سلسلے میں قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ بات میرے لئے ثابت ہوگئی ہے کہ ایران، قائد انقلاب کی سربراہی میں مذاہب کے مابین مکالمے کا ایک مقام بن گیا ہے۔

آرمینیائی برادری کے آرچ بشپ نے کہا کہ اس منصوبے سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ ہم اپنے ماضی کو فراموش نہیں کرتے اور ہم انہیں ہمیشہ یاد رکھتے ہیں؛ بائبل میں بھی کہا گیا ہے کہ یہ نہ سمجھو کہ جو لوگ اللہ رب العزت کی راہ میں جاں بحق ہوگئے ہیں وہ مر چکے ہیں بلکہ وہ زندہ ہیں اور خدا کی طرف سے ان کی خدمت کی کروائی جاتی ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha