ایران اور پاکستان افغان امن عمل میں مزید فعال کردار ادا کریں: اشرف غنی

کابل، ارنا- افغان صدرنے ایران اور پاکستان سے افغان امن عمل اور افغانستان میں قیام امن اور استحکام لانے میں مزید فعال کردار ادا کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے ان سے اس حوالے سے کسی بھی کوشش سے دریغ نہ کرنے کی درخواست دی۔

ان خیالات کا اظہار "محمد اشرف غنی" نے آج بروز اتوار کو "امیگریشن ڈے" کی مناسبت سے منعقدہ ایک اجلاس کے دوران، گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر انہوں نے پڑوسی ممالک بالخصوص ایران اور پاکستان سے افغان امن عمل اور افغانستان میں قیام امن اور استحکام لانے میں مزید فعال کردار ادا کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے ان سے اس حوالے سے  کسی بھی کوشش سے دریغ نہ کرنے کی درخواست دی۔

انہوں نے کہا کہ عالمی برادری نے طالبان گروہ کو سیاسی حیثیت دی ہے اور اب طالبان جنگ جاری رکھنے، عوامی سہولیات کو تباہ کرنے اور شہریوں کو روزانہ نشانہ بنانے کے ذمہ دار ہیں؛ لہذا ہم بین الاقوامی برادری اور علاقائی ممالک سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ طالبان کیجانب سے عوام کیخلاف اس مسلط کردہ ناجائز جنگ کے بائیکاٹ اور مذمت کریں۔

اشرف غنی نے افغان مہاجرین کو اپنی ہی سرزمین میں واپسی کیلئے مناسب شرائط کی فراہمی کو اپنی حکومت کا فرض قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں یقین ہے کہ افغان پناہ گزین، ملک کے ایک اہم حصہ اور سرمایہ ہیں۔

 اس موقع پر اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے برائے افغانستان کے امور اور اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے مہاجرین (یو این ایچ سی آر) نے بھی کہا کہ گزشتہ چار دہائیوں سے لاکھوں افغان، بے گھر ہونے، قدرتی آفات، غربت اور مسلسل جنگ سے شدید متاثر ہوئے ہیں۔

انہوں نے افغانستان میں تشدد کی کمی پر زور دیتے ہوئے اقوام متحدہ کیجانب سے پیس پروسس کے فریم ورک کے اندر افغان حکومت کیجانب سے ملک کے اندر قیام امن اور استحکام لانے کے اقدامات کی حمایت کرنے پر زور دیا۔

انہوں نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ وہ افغان پناہ گزینوں کی اپنی ہی سرزمین میں واپسی کیلئے درکار مسائل کا ضرور تعاقب کریں گے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha