18 جون، 2021 6:17 PM
Journalist ID: 2393
News Code: 84373423
0 Persons
انتخابات میں کوئی سیکورٹی مشکل نہیں ہے : جنرل اشتری

تہران، ارنا – ایرانی پولیس کے سربراہ نے کہا ہے کہ سپاہ پاسداران اور پولیس کے درمیان اچھی ہم آہنگی کے ساتھ انتخابات کا عمل پرامن اور پرسکون طور پر منعقد ہو جاتا ہے اور کوئی سیکورٹی مشکل نہیں ہے۔

یہ بات جنرل حسین اشتری نے جمعہ کے روز 1400 کے انتخابات کی سیکورٹی اور سلامتی کے بارے میں کہی۔

انہوں نے کہا کہ اللہ کے فضل و کرم ایرانی پولیس اور سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے مابین یکجہتی اور ہم آہنگی کے ساتھ انتخابی عمل پرسکون ہے اور ہمیں کوئی سکیورٹی پریشانی نظر نہیں آئی۔

انہوں نے کہا کہ پولنگ اسٹیشنز میں 130 ہزار سے زائد رضاکار فورسز پولیس فورسز کے ساتھ تعاون کر رہے ہیں خدا کا شکر ہےکہ لوگوں کی موجودگی بہت عمدہ اور شاندار رہی ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ ہم امید کرتے ہیں کہ عوام کی موجودگی اور انتخابات کی سکیورٹی کے لئے پولیس اور پاسداران انقلاب کے مابین ہم آہنگی ملک کی ترقی اور برکت کا باعث ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق آج صبح سات بجے سے اسلامی جمہوریہ ایران کے دارالحکومت تہران سمیت تمام چھوٹے و بڑے شہروں، قصبوں اور دیہاتوں میں تیرہویں صدارتی انتخابات کے سلسلے میں ووٹنگ کا آغاز ہوگیا ہے اور کل دو بجے تک جاری ہوگا۔

ایران میں 59 ملین 3 لاکھ 10 ہزار اور 307 افراد ووٹنگ میں حصہ لینے کے اہل ہیں۔ ایران کے تیرہویں صدارتی انتخابات میں عوام کی سہولت اور بھر پور شرکت کے پیش نظر 72 ہزار پولنگ اسٹیشن قائم کئے گئے ہیں۔ صدارتی انتخابات سے تین امیدوار دستبردار ہوگئے ہیں  جن میں مہر علیزادہ، علی رضا زاکانی اور سعید جلیلی شامل ہیں ۔ تین امیدواروں کے صدارتی انتخابات سے دستبردار ہوجانے کے بعد اب چار امیدوار سید ابراہیم رئيسی ، محسن رضائی ، قاضی زادہ ہاشمی اور عبدالناصر ہمتی میدان میں موجود ہیں 

قابل ذکر ہے کہ دنیا کے 226 ذرائع سے تعلق رکھنے والے 500 غیر ملکی صحافی ایران میں ہونے والے 13 ویں صدارتی انتخابات اور شہری- دیہی اسلامی کونسلز کے چٹھے الیکشن کی کوریج کر رہے ہیں۔

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha