ایران اور پاکستان کے سرحدی عہدیداروں کا اجلاس؛ سیکیورٹی تعاون پر زور

اسلام آباد، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران اور پاکستان کے سرحدی عہدیداروں کا ایک اجلاس تفتان بارڈر میں منعقد ہوا جس میں دونوں فریقین نے سیکیورٹی تعاون کو مستحکم کرنے اور مشترکہ سرحدوں پر کسی بھی ناخوشگوار صورتحال سے نمٹنے کی ضرورت پر زور دیا۔

پاکستانی اخبار ڈان کی ویب سائٹ نے منگل کے روز اطلاع دی ہے کہ یہ ملاقات کل ہوئی تھی اور اس کی سربراہی تفتان سرحدی علاقے کے ڈپٹی کمشنر عصمت اللہ اچک زی  پاکستانی وفد کے سربراہ کے عہدے پر فائزتھے اور اس ملاقات میں میرجاوہ سرحد کے محافظوں پر مشتمل ایک ایرانی وفد بھی موجود تھا۔

پاکستانی میڈیا کے مطابق ، دونوں فریقوں نے مشترکہ تعاون بڑھانے کی ضرورت پر زور دیا جس کا مقصد سرحدی سلامتی کو مستحکم کرنا ہے۔ ایرانی فریق نے جمعہ 18 جون کو ہونے والے ایرانی صدارتی انتخابات کے موقع پر پاکستان کے ساتھ مشترکہ سرحد پر موثر حفاظتی اقدامات کی یقین دہانی پر بھی زور دیا۔

پاکستان کا انگریزی زبان 'ڈان' اخبار نے اس سرحدی نشست سے ایک سیکیورٹی اہلکار کے حوالے سے بتایا کہ ایران - پاکستان سرحدی وفود نے بھی سرحدی انتظام و سلامتی پر ہم آہنگی کو یقینی بنانے کے لئے باہمی تعاون میں اضافہ پر اتفاق کیا۔

پاکستان کے وزیر داخلہ نے 25 مئی کو اعلان کیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور  پاکستان کی مشترکہ سرحدوں پر باڑ لگانے کا اقدام سنہ 2021 کے آخر تک مکمل ہوجائے گا۔

انہوں نے بتایا کہ اب تک ایران کے ساتھ مشترکہ سرحدوں میں باڑ لگانے کا منصوبہ کا 44٪ مکمل ہوچکا ہے اور 2021 کے آخر میں مکمل ہوجائے گا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha