ایران میں زرعی مصنوعات کی پیداوار 134 ملین ٹن تک پہنچ گئی ہے

شہر ری، ارنا- ایران میں مختلف زرعی مصنوعات کی پیداوار 2013ء میں 96 ملین ٹن تھی جس میں اضافہ ہوکر 2020ء میں 134 ملین ٹن تک پہنچ گئی۔

ان خیالات کا اظہار ایرانی محکمہ زارعت کے ڈپٹی ڈائریکٹر آف مینجمنٹ اینڈ ریسورس ڈویلپمنٹ "شاہرخ شجری" نے پیر کے روز شہرری میں منعقدہ ایک تقریب کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ملک میں زراعی مصنوعات کی پیداوار سالانہ 68 ملین ٹن تھی جو 2013ء میں 96 ملین ٹن تک بڑھ گئی اور اس کے بعد اس میں اضافہ ہوکر 2020ء میں 134 ملین ٹن تک پہنچ گئی۔

شجری نے مزید کہا کہ اسی عرصے کے دوران، گارڈن پڑوڈکٹ کی پیداور بھی 16 ملین ٹن سے بڑھ کر 25 ملین ٹن تک پہنچ گئی۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ آٹھ سالوں کے دوران، مویشی پالنے والے، محکمہ زارعت کی محتاط منصوبہ بندی سے اپنے مویشیوں کی پیداوار کو 12 ملین ٹن سے بڑھا کر 16 ملین ٹن کرنے میں کامیاب ہوگئے۔

شجری نے کہا کہ ماہی گیری صنعت میں بھی 2013ء میں فشری پڑوڈکٹ 900 ہزار ٹن تھی جس میں اضافہ ہوکر 2020ء میں ایک ملین تک بڑھ گئی۔

انہوں نے زراعت کے معاشی اشارے بڑھانے میں زرعی شعبے کے اہم کردار کی طرف اشارہ کیا اور کہا کہ زرعی شعبے کی ویلیو ایڈڈ گروتھ 2013ء میں 3.7 فیصد سے بڑھ کر 2020ء میں 9 فیصد ہوگئی ہے، جبکہ زرعی شعبے میں شامل ویلیو ایڈڈ کے مقابلے میں جی ڈی پی کی نمو کم اور منفی بھی رہی ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha