جارحیت اور قبضے پر مبنی نظام زیادہ دیر نہیں چلتا ہے: ظریف

تہران، ارنا- ایرانی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ وہ نظام جو جارحیت اور قبضے کی بنیاد پر بنایا گیا ہے وہ زیادہ دیر نہیں چلتا ہے اور اب وہ ظالم (نیتن یاہو) کا تختہ پلٹ گیا اور غزہ کی فتح کا پرچم لہرایا گیا ہے؛ ایران عزت کی راہ کا سلسلہ جاری رکھے گا۔

ان خیالات کا اظہار "محمد جواد ظریف" نے آج بروز پیر کو ایک ٹوئٹر پیغام میں کیا اور کہا کہ فلسطینیوں کیخلاف طویل عرصے تک جنگ اور ایران کی دھمکی دینے کے بعد اب وہ ظالم (نیتن یاہو) کا تخت پلٹ گیا اور غزہ کی فتح کا پرچم لہرایا گیا ہے؛ ایران عزت کی راہ کا سلسلہ جاری رکھے گا۔

انہوں نے کہا کہ شاید اس کے بعد بر سرکار آنے والے افراد کو پتہ چل جائے کہ وہ نظام جو جارحیت اور قبضے کی بنیاد پر بنایا گیا ہے وہ زیادہ دیر نہیں چلتا ہے۔

واضح رہے کہ صہیونی ریاست کے قانون سازوں نے اتوار کے روز اتحادی حکومت کے حق میں اعتماد کے ووٹ کو منظوری دے دی۔ اس کےساتھ ہی صہیونی ریاست میں سب سے زیادہ مدت تک وزیر اعظم رہنے والے بینجمن نیتن یاہو کے اقتدار کا خاتمہ ہو گیا۔

اتحادی حکومت میں شامل جماعتوں کے مابین سخت نظریاتی اختلافات ہیں تاہم وہ نیتن یاہو کو برطرف کرنے کیلئے متفق ہوگئیں۔ 120 رکنی صہیونی پارلیمان میں ووٹنگ کے دوران "نیفتالی بینیٹ" کو 59 کے مقابلے میں 60 ووٹ ملے جب کہ ایک رکن غیر حاضر رہا۔

ووٹنگ کے فوراً بعد نیفتالی بینیٹ نے وزیر اعظم کے عہدے کا حلف لے لیا اور اپنے سابق حلیف کو ہٹا کر صہیونی ریاست کے پہلے آرتھوڈوکس یہودی رہنما بن گئے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha