انتخابات میں عوام کا حصہ لینے سے مستقبل کی پابندیاں غیر موثر ہوں گی: ظریف

تہران، ارنا- ایرانی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ انتخابات میں عوام کی شرکت، نہ صرف پابندیوں کی منسوخی کے عمل میں مزید تیزی لائے گی اور عوام کیخلاف معاشی جنگ کی بنیاد ٹوٹ جائے گی بلکہ اس سے مستقبل کی پابندیاں بھی غیر موثر ہوں گی۔

ان خیالات کا اظہار "محمد جواد ظریف" نے آج بروز پیر کو اپنے انسٹاگرام اکاونٹ میں شائع کی گئی ایک ویڈیو میں کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم جمعہ کا دن، بیلٹ باکس کے ذریعے روشنی کی کھڑکیوں کو اپنے اور اپنے بچوں کے مستقبل کیلئے کھلی رکھنے کی امید کر سکتے ہیں۔

ظریف نے کہا کہ کوتاہیاں اور غلطیاں کچھ کم نہیں تھیں اور میں اپنی طرف سے لوگوں کو مصائب اور مشکلات کا شکار ہونے پر شرمندہ ہوں لیکن بلاشبہ، بلیٹ باکس سے غصہ کوئی طریقہ حل نہیں اور ایسا کرنے سے اگر مشکلات میں اضافہ نہ ہوجائے تو اس سے کم نہیں ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ ترقی پسند قوم ایک ایسی قوم ہے جو اصلاح اور پیشرفت کے کوئی بھی موقع کو ہاتھ سے جانے نہیں دیتی ہے؛ ہمارے لوگ ملک کی آزادی، سلامتی، فخر اور ترقی کے سب سے موثر ضامن ہیں۔

ظریف نے کہا کہ اندرون و بیرون ملک لوگوں کی ذہانت اور وسیع پیمانے پر انتخابات میں شرکت، اپنی تقدیر کا تعین کرنے میں قومی طاقت کا تعین کرتی ہے، عالمی سطح پر قومی مفادات کا تحفظ کرتی ہے اور تعمیری بین الاقوامی تعاون میں انتہائی موثر کردار ادا کرتی ہے۔

انہوں نے انتخابات میں عوام کی وسیع پیمانے پر شرکت کے اثرات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ انتخابات میں عوام شرکت، نہ صرف پابندیوں کی منسوخی کے عمل میں مزید تیزی لائے گی اور عوام کیخلاف معاشی جنگ کی بنیاد ٹوٹ جائے گی بلکہ اس سے مستقبل کی پابندیاں بھی غیر موثر ہوں گی۔

ظریف نے کہا کہ انتخابات میں بڑے پیمانے پر شرکت بیرونی اور اندرونی انتہا پسندوں، صہیونیوں اور معاشی دہشت گردوں کی مایوسی کا باعث بنے گی، جو ایرانوفوبیا اور جوہری معاہدے کی تباہی کے لالچ میں، تعاون کی شکست اور پابندیوں پر اضافے کی امید رکھتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایرانی عوام نے ہمیشہ سے اچھے مواقع پیدا کیے ہیں؛ مجھے امید ہے کہ تیرہویں صدراتی انتخابات میں عوام، خوشحال، آزاد اور ترقی یافتہ ایران کی طرف گامزن ہونے کا ایک نیا موقع پیدا کریں گے؛ آئیں مل کر 18 جون کو ایرانیوں کیلئے قومی امید کا فیسٹیول بنائیں۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha