ظریف کا کربلا میں قائم ایرانی قونصلیٹ کیخلاف حالیہ حملے میں ملوثین کی شناخت پر زور

تہران، ارنا- ایرانی وزیر خارجہ نے کربلا میں قائم ایرانی قونصلیٹ کیخلاف حالیہ حملے میں ملوثین کی شناخت پر زور دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کرلیا کہ عراق کی نئی حکومت کے بر سر کار آنے سے اس طرح کے واقعات دوبارہ دہرائے نہیں جائیں گے۔

ان خیالات کا اظہار "محمد جواد ظریف" نے آج بروز پیر کو اپنے عراقی ہم منصب "فواد حسین" کیساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے کے دوران، گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کربلا میں قائم ایرانی قونصل خانے کیخلاف حالیہ حملہ، جو قانونی اصولوں اور سفارتی رویوں سمیت، 1963ء کے ویانا کنونشین کیخلاف ورزی ہے، پر احتجاج کیا۔

ظریف نے عراقی فریق کو ان کے ملک میں قائم سفارتی مقامات کے تحفظ کی ذمہ داری پوری کرنے کی یاد دلانی کرائی اور کربلا میں قائم ایرانی قونصلیٹ کیخلاف حالیہ حملے میں ملوثین کی شناخت پر زور دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کرلیا کہ عراق کی نئی حکومت کے بر سر کار آنے سے اس طرح کے واقعات دوبارہ دہرائے نہیں جائیں گے۔

اس موقع پر عراقی وزیر خارجہ نے اس واقعے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا کہ ان کا ملک سفارتی مقامات کے تحفظ پر مزید ذمہ داری سے کام کرے گا۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ سفارتی مقامات کے تحفظ پر سخت سیکورٹی اقدامات اٹھانے کا حکم دیا گیا ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

متعلقہ خبریں

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha