مراکشی حکومت کا بے بنیاد الزامات فلسطینی مقصد کے وفاداروں کے خلاف ہے: ایرانی ترجمان

تہران، ارنا – ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے مراکشی حکومت کے بے بنیاد الزامات کو خطے میں امریکی اور اسرائیلی منصوبوں کی حمایت اور فلسطینی مقصد کے وفاداروں کے خلاف قرار دیا۔

سعید خطیب زادہ نے ہفتہ کے روز اسرائیل نواز لابی اے آئی پی اے سی کے ممبروں کے ساتھ کے آن لائن رابطے  کے دوران مراکش کے وزیر خارجہ کے بیانات پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ مراکشی حکومت نے اپنے علاقائی مسائل حل کرنے میں ناکامی کی وجہ سے مجرم صہیونی حکومت کی حمایت کے ساتھ ساتھ ایک بار پھر اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف اپنے جھوٹے اور بے بنیاد الزامات کو دہرایا۔

خطیب زادہ نے کہا کہ یہ بدقسمتی ہے کہ مراکش کی حکومت جس وقت قدس کمیٹی کی سربراہی کرتی ہے اور ایسی صورتحال میں جہاں عالم اسلام کو پہلے سے کہیں زیادہ اتحاد کی ضرورت ہے امت مسلمہ کے دشمنوں کے اہداف کی مدد کے لئے عالم اسلام کے اصل مسئلے( القدس پر تجاوزات کا مقابلہ کرنا اور فلسطینی عوام کے حقوق کا دفاع کرنا ) سے توجہ ہٹانے کی کوشش کر رہی ہے۔  

 مراکشی وزیر خارجہ ناصر بوریطہ نے جمعرات کے روز پہلی بار امریکی اسرائیل تعلقات عامہ کمیٹی (اے آئی پی اے سی ) کی کانفرنس میں شرکت کر کے بیت المقدس کے قابض حکومت کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کے اسرائیلی حکومت کے اقدام کی حمایت میں ایران پر الزامات عائد کیے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURD

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha