امریکہ اور تمام فریق جوہری معاہدے کی بحالی کے لئے سنجیدہ ہیں: ایرانی مذاکرات کار

تہران، ارنا – ایرانی وزیر خارجہ کے نائب اور ایرانی مذاکراتی ٹیم کے سربراہ نے جوہری معاہدے کے مشترکہ کمیشن کے اجلاس میں موجودہ فریقین کے سنجیدہ عزم پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایسا لگتا ہے کہ امریکہ جوہری معاہدے میں واپس آنے کے بارے میں بھی سنجیدہ ہے اور اب تک پابندیوں کا ایک بڑا حصہ اٹھانے کے لئے اپنی تیاری کا اعلان کر چکا ہے۔

 یہ بات سید عباس عراقچی نے ویانا میں جوہری معاہدے کے مشترکہ کمیشن کے چوتھے دور کے اختتام کے بعد اس اجلاس کی تفصیلات پر روشنی ڈالتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ مذاکرات کے نئے دور کے مشترکہ کمیشن کا پہلا اجلاس آج ویانا میں ہوا اور سہ پہر سے پابندیاں ختم کرنے سے متعلق ورکنگ گروپ اور جوہری سرگرمیوں سے متعلق ورکنگ گروپ اپنی سرگرمیاں شروع کردیں گے۔

عراقچی نے مزید کہا کہ امریکیوں کی طرف سے آنے والے والی خبروں سے یہ ظاہر ہوتی ہے کہ وہ جوہری معاہدے کی واپسی کے بارے میں بھی سنجیدہ ہیں اور پابندیوں کا ایک بڑا حصہ اٹھانے کے لئے اپنی تیاری کا اعلان کر چکے ہیں البتہ ہماری رائے میں یہ ابھی کافی نہیں اور جب تک ہم اس میدان میں اپنے تمام مطالبات تک نہ پہنچیں تب تک یہ مذاکرات جاری ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURD

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha