ایران اور 4 + 1  گروپ کے مواقف کی قربت پر خلیج فارس کے ممالک کا خیرمقدم

تہران، ارنا - کویت میں تعینات ایرانی سفیر نے کہاہے کہ ایران اور 4 + 1 گروپ کے مواقف کی قربت پر خلیج فارس کے ممالک کا خیرمقدم کرتے ہیں۔

یہ بات محمد ایرانی نے منگل کے روز ارنا کے نمائندے کے ساتھ گفتگو کرتے ہو‏ئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ خلیج فارس کے ممالک کا خیال ہے کہ ایران اور امریکہ کے مابین تناؤ ان ممالک کی سلامتی کو متاثر کرتا ہے تو یہ فطری بات ہے کہ وہ 4 + 1 اور ایران کے مواقف کی قربت کا خیرمقدم کریں۔

انہوں نے ایک ہی وقت میں جوہری مذاکرات اور ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف کےدورے قطر، عراق، عمان اور کویت کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ یہ، علاقائی مسائل اور موضوعات پر ایرانی خارجہ پالیسی کی توجہ کی علامت ہے۔

انہوں نے ایرانی خارجہ پالیسی میں خلیج فارس کے خطے کی اہمیت کا حوالہ دیتے ہو‏ئے کہا کہ گزشتہ سالوں سے ان سیاسی اور حکمرانی کے ڈھانچے کی وجہ سے مغرب اور امریکہ کے ساتھ خلیج فارس کے ممالک کے تعلقات بہت قریبی ہیں اور اسی وجہ سے یہ ممالک ایران اور امریکہ کے مابین ممکنہ کشیدگی کے اضافے پر ہمیشہ ہی تشویش کا شکار ہیں۔ اور یہ پریشانی بدستور جاری ہے۔

انہوں نے ایران کے ساتھ تناؤ کو کم کرنے اور تعلقات میں بہتری لانے کے لیے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے حالیہ بیانات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب اور ایران کے مابین کشیدگی کم کرنے کی مثبت علامات ہیں۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURD

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 12 =