دنیا کے پاس ایران سے متفق ہونے اور پابندیوں کی منسوخی کے سوا کوئی چارہ نہیں ہے

تہران، ارنا- ایرانی صدر نے ویانا میں جوہری معاہدے کی بحالی سے متعلق مذاکرات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ویانا مذاکرات سے ایران کی اعلی طاقت ظاہر ہوتی ہے اور آج دنیا نے قبول کرلیا ہے کہ ایران سے متفق ہونے اور پابندیاں ختم کرنے کے سوا کوئی دوسرا راستہ نہیں ہے اور یہ ایرانی عوام کیلئے بہت بڑی کامیابی ہے۔

 ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر "حسن روحانی" نے آج بروز پیر کو ملک کے کچھ سرگرم اقتصادی کارکنوں سے ایک ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

صدر روحانی نے کہا کہ ایران کیخلاف ٹرمپ کی معاشی جنگ، ملک کی تباہی اور نظام کا تختہ الٹنا تھا؛ لیکن قائد اسلامی انقلاب کی ہدایات سمیت ایرانی عوام کی مزاحمت اور کوششوں سے امریکہ اور ساری دنیا نے اعتراف کیا ہے کہ ایران سے متعلق امریکی پالیسی کو شکست کا سامنا ہوا ہے۔

انہوں نے کہا ان مشکل صورتحال پر قابو پانے کیلئے معاشی شعبوں کی انتھک کوششوں نے انتہائی اہم کردار ادا کیا اور ہمیں ایران کی ترقی کیلئے اقتصادی اور سائنسی شعبوں میں ملک کی پوزیشن کو بہتر بنانی ہوگی۔

صد روحانی نے کہا کہ 4۔7 فیصد کی منفی معاشی نمو اور 35 فیصد افراط زر نے گیارہویں حکومت کا اقتدار سنبھالنے کیلئے ایک بہت ہی مشکل صورتحال پیدا کردی تھی، اور جب ہم نے پہلے 100 دنوں میں افراط زر کی کمی اور مثبت معاشی کے حکومتی منصوبوں کا اعلان کیا تو کچھ دوستوں کا خیال تھا کہ یہ وعدے قابل عمل نہیں ہیں؛ لیکن ہم نے دن رات کی کوششوں سے اس راستے میں اعلی کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ملک کی معاشی صورتحال میں مثبت تبدیلی لائی۔

انہوں نے کہا ہم نے ایران کی جوہری ٹیکنالوجی میں حاصل کردہ کامیابیوں کے تحفظ کی کوشش کرتے ہوئے اقتصادی اور صنعتی شعبوں میں ترقی پر توجہ دی۔

صدر روحانی نے کہا کہ حکومت کی تمام تر کوششیں خطے اور دنیا میں ایران کے مقام کو بلند کرنے کی تھیں؛ اگرچہ دنیا میں یہ غلط فہمی موجود تھی کہ ایران کیساتھ مذاکرات کرنا اور کسی نتیجے پر پہنچنا ممکن نہیں ہے؛ لیکن تدبیر اور امید کی حکومت نے اس غلط فہمی کو دور کرنے کی اصلاح کی۔

انہوں نے ملک میں علم پر مبنی کمپنیوں کی ترقی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا اب ملک میں ان کمپینوں ک تعداد 55 سے 6 ہزار تک پہنچ گئی ہے۔

صدر روحانی نے کورونا کیخلاف نمٹنے کیلئے ایرانی طبی ٹیموں اور دیگر متعلقہ اداروں کی جد و جہد پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے اس حوالے سے بہت سارے تعمیری اقدامات اٹھائے گئے۔

انہوں نے ویانا میں جوہری معاہدے کی بحالی سے متعلق مذاکرات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ویانا مذاکرات سے ایران کی اعلی طاقت ظاہر ہوتی ہے اور آج دنیا نے قبول کرلیا ہے کہ ایران سے متفق ہونے اور پابندیاں ختم کرنے کے سوا کوئی دوسرا راستہ نہیں ہے اور یہ ایرانی عوام کیلئے بہت بڑی کامیابی ہے۔

انہوں نے آنے والے مہینوں میں ایران کے صدراتی انتخابات کی اہمیت پر تبصرہ کرتے ہوئے اس میں بڑے جوش و خروش سے حصیہ لینے کی ضرورت پر زور دیا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha