ایرانی سپر ہیوی ویٹ لفٹر نے ایشیائی مقابلوں کا طلائی تمغہ جیت لیا

تہران، ارنا- ایرانی ویٹ لفٹر "علی داودی" نے ازبکستان میں منعقدہ پاورلفٹنگ مقابلوں کی 109 کلوگرام کی کیٹیگری میں اعلی کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایک طلائی تمغے کو اپنے نام کرلیا۔

واضح رہے کہ ازبکستان کے شہر تاشقند میں منعقدہ ایشیائی پاورلفٹنگ مقابلوں کا 17 سے 25 اپریل تک انعقاد کیا جاتا ہے۔

ان مقابلوں میں ایران سے علی داووی نے 109 کلوگرام کی کیٹیگری میں اپنی مکمل مہارت کا جوہر دیکھاتے ہوئے 198 کلوگرام کا وزن اٹھاکر ایک طلائی تمغے کا حصول کیا۔

نیز گزشتہ روز کے دوران، ایران سے "کیا قدمی" نے ایشیائی پاورلفٹنگ مقابلوں کی 109 کلوگرام کی کیٹیگری میں 223 کلوگرام کا وزن اٹھاکر تیسری پوزیشن کو اپنی نام کرلی۔

 اس کے علاوہ ان مقابلوں میں شریک دیگر ایرانی ویٹ لفٹر "سہراب مرادی" نے گزشتہ دنوں میں 96 کلوگرام کی کیٹیگری میں اعلی کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے مجموعی طور پر 384 کلوگرام کا وزن اٹھا کر دو چاندی اور ایک کانسی کے تمغے جیت لیے؛ تا ہم وہ ٹوکیو اولمپک میں حصہ لینے کیلئے کوالیفائی نہیں کر سکا۔

نیز ایران سے "کیانوش رستمی" نے گزشتہ روز کے دوران، منعقدہ ان مقابلوں کی 89 کلوگرام کی کیٹیگری میں اپنی مکمل مہارت کا جوہر دیکھاتے ہوئے مجموعی طور 737 کلوگرام کا وزن اٹھاکر دو طلائی اور ایک چاندی کے تمغے جیت لیے۔

ایران سے "سید رسول متعمدی دہدار" نے بھی اعلی کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے دو طلائی اور ایک کانسی کے تمغوں کو اپنے نام کرلیا۔

اس کے علاوہ ان مقابلوں میں شریک دو دیگر ایرانی ویٹ لفٹرز "رسول دہدار" اور "میر مصطفی جوادی" نے بالترتیب ایک طلائی اور ایک کانسی کے تمغے کو حاصل کرلیا۔

یہ مقابلے ایران کیلئے انتہائی اہم ہیں کیونکہ وہ اولمپک میں حصہ لینے کیلئے اپنے پوانٹس میں اضافہ کرسکتا ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha