نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے بین الاقوامی امور کا امریکی پابندیوں کی منسوخی پر پُرامید

تہران، ارنا- نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے بین الاقوامی اور قانونی امور نے عالمی عدالت انصاف کے سربراہ سے ایک ملاقات کے دوران، اس امید کا اظہار کرلیا کہ مستقبل قریب میں قوموں اور بین الاقومی تنظیموں کیخلاف پابندیوں کا خانمہ ہوجائے گا۔

ان خیالات کا اظہار "محسن بہاروند" نے آج بروز جمعہ کو نیڈرلینڈز کے شہر دی ہیگ میں "ہافمنسکی" سے ملاقات اور گفتگو کی۔

اس موقع پر دونوں فریقین نے عالمی عدالت انصاف کی تازہ ترین تبدیلیوں بشمول افغانستان اور مقبوضہ فلسطین کے قانونی مسائل کا جائزہ لیا۔

دراین اثنا نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے بین الاقوامی اور قانونی امور نے عالمی عدالت انصاف سے متعلق امریکی رویے میں تبدیلی کے آئی سی سی کے سربراہ کے بیانات پر تبصرہ کرتے ہوئے اس امید کا اظہار کرلیا کہ مستقبل قریب میں قوموں اور بین الاقومی تنظیموں کیخلاف پابندیوں کا خانمہ ہوجائے گا۔

اس کے علاوہ بہاروند نے نجی بین الاقوامی قانون سے متعلق دی ہیگ کانفرنس کے سکریٹری جنرل "کریسٹف برناسکی" سے ایک ملاقات کے دوران، افراد اور کمپنیوں کے مابین تعلقات میں آسانی لانے کے ساتھ ساتھ ممالک کی معاشی ترقی کیلئے اس تنظیم کے فریم ورک میں تیار دستاویزات کی اہمیت پر زور دیا۔

انہوں نے غیر ملکی دستاویزات کی تصدیق کرنے کی ضرورت کو منسوخ کرنے والے کنونشن (اپوسٹائل) میں اسلامی جمہوریہ ایران کے الحاق کے عمل سے متعلق تازہ ترین پیشرفتوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران متعلقہ اداروں کیساتھ ہم آہنگی سے مذکورہ کنونشن کی ایگزیکٹو ہدایات کو حتمی شکل دینے کے بعد کنونشن میں الحاق کی دستاویز کو پیش کرے گا۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha