ایران اور پڑوسی ملکوں کے درمیان 5۔36 ارب ڈالر کی تجارتی لین دین

تہران، ارنا- ایرانی کسٹم ادارے کے ترجمان نے کہا ہے کہ گزشتہ سال کے دوران، ایران اور ہمسایہ ملکوں کے درمیان 82 ملین 535 ہزار 389 ٹن مختلف قسم مصنوعات کی تجارتی لین دین ہوئی ہیں جن کی مالیت کی شرح 36 ارب 502 ملین 315 ہزار 869 ڈالر تھی۔

"سید روح اللہ لطیفی" نے کہا کہ ایران اور 15 ممالک بشمول متحدہ عرب امارات، افغانستان، آرمینیا، آذربائیجان، بحرین، عراق، کویت، قازقستان، عمان، پاکستان، قطر، روس، ترکی، ترکمانستان اور سعودی عرب سے زمینی اور سمندری سرحدیں ہیں جن سے ایران کی درآمدات اور برآمدات کا عمل انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ کورونا وبا کی وجہ سے رونما ہونے والی ابتر صورتحال اور ایران کیخلاف ظالمانہ پابندیوں کے باوجود، گزشتہ سال کے دوران، ایران اور ہمسایہ ممالک کے درمیان غیر ملکی تجارت کی شرح قابل قبول تھی۔

 لطیفی نے کہا کہ ایران اور ہمسایہ ملکوں کے درمیان 82 ملین 535 ہزار 389 ٹن مختلف قسم مصنوعات کی تجارتی لین دین ہوئی ہیں جن کی مالیت کی شرح 36 ارب 502 ملین 315 ہزار 869 ڈالر تھی۔

ایرانی کسٹم ادارے کے سربراہ نے مزید کہا کہ جن میں سے 67 ملین 841 ہزار 213 ٹن مصنوعات کو ایران سے ہمسایہ ملکوں میں برآمد کیا گیا ہے جس کی مالیت کی شرح 20 ارب 357 455 ہزار 213 ڈالر تھی۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران نے سب سے زیادہ عراق کو مصنوعات کی برآمدات کی ہیں اور اسی عرصے کے دوران ایران سے 25 ملین 670 ہزار392 ٹن مصنوعات کو عراق میں برآمد کیا گیا ہے اور اس کی مالیت کی شرح 7 ارب 448 ملین 431 ہزار 637 ڈالر تھی۔

لطیفی نے کہا کہ اسی عرصے کے دوران، ایران نے دیگر ممالک کے مقابلے میں بحرین کو مصنوعات کی سب سے کم برآمدات کی ہیں اور ایران سے بحرین کو 8 ملین 473 ہزار 704 ڈالر مصنوعات کی برآمدات ہوئی ہیں۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha