ایرانی آرمی کے کمانڈر انچیف کا غیر ملکی ممالک کے فوجی عہدیداروں کو پیغام

تہران، ارنا - ایرانی آرمی سپہ سالار نے کہا ہے کہ ایرانعالمی سلامتی  اور مغربی ایشین خطے میں پائیدار سلامتی کو یقینی بنانے تمام امن پسند ممالک کے ساتھ  مل کر کام کرنے کے لئے تیار ہے۔

یہ بات میجر جنرل عبدالرحمیم موسوی نے پیر کے روز آرمی کے دن کی مناسبت سے ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے اپنے ایک پیغام میں بیرونی ممالک کے فوجی عہدیداروں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اسلامی انقلاب بیسویں صدی کے آخری عشروں میں رونما ہونے والی تبدیلیوں میں سے ایک ہے جس نے فکری ، ثقافتی اور سیاسی کے شعبوں میں ایران، مغربی ایشیا اور دنیا کو بہت متاثر کیا۔

موسوی نے مزید کہا کہ انقلاب اور ملک کے دشمن جنہوں نے عالمی استکبار کے تسلط سے ایران کے انخلا کو برداشت نہیں کیا، انقلاب کو ختم کرنے کے پیچیدہ منصوبے وضع کیے۔

موسوی نے کہا کہ آج  اسلامی جمہوریہ ایران کی فوج خلیج فارس ، بحر عمان اور شمالی بحر ہند میں سلامتی فراہم کرنے والے ایک بنیادی عوامل میں سے ایک ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ امریکہ ایران کی دفاعی اور میزائل صلاحیتوں کو مستحکم کرنے کی مخالفت کرتا ہے جبکہ اس مسئلے کو جابرانہ پابندیوں کے بہانے کے طور پر استعمال کرتا رہا ہے اور ایران کو براہ راست فوجی دہمکی دینے کے ساتھ ساتھ خطے میں زیادہ تر اسلحہ برآمد کر رہا ہے۔

جنرل موسوی نے بتایا کہ ایسے وقت میں جب ہم دہشت گرد گروہوں کے ساتھ امریکی یکجہتی اور تعاون کا مشاہدہ کر رہے ہیں، اس میں کوئی شک نہیں کہ خطے سے غیر ملکیوں کا انخلاء اور دنیا کے ذمہ دار ممالک بالخصوص مغربی ایشیاء کے ممالک کے مابین تعاون اور باہمی رابطوں کا تسلسل ضروری ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

https://twitter.com/IRNAURD

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha