ایرانی وزیر خارجہ کا ترجیحی ٹیرف کے معاہدے کو حتمی شکل دینے پر زور

تہران، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے ترجیحی  ٹیرف کے معاہدے کو حتمی شکل دینے کی ضرورت پر زور دیا۔

یہ بات محمد جواد ظریف جو انڈونیشیا کے دورے پر ہے، نے آج بروز پیر اپنی انڈونیشی ہم منصب خاتون رتنو مرسودی سے ملاقات میں کہی۔

انہوں نے ترجیحی ٹیرف کے معاہدے کو حتمی شکل دینے میں تیزی لانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے اس سلسلے میں مذاکرات جاری رکھنے کے لئے ایرانی فریق کی تیاری کا اعلان کیا۔

ظریف نے دونوں ممالک کے مابین ستر سالہ دوستانہ تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے سلامتی کونسل میں قرارداد 2231 کے نفاذ اور جوہری معاہدے کے بچانے کیلیے انڈونیشیا کے اصولی موقف کی تعریف کی۔

 ظریف نے دونوں ممالک کے مابین تجارتی تعلقات کے حجم میں اضافے پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے دونوں ممالک کے مابین تجارتی تعلقات کی عظیم صلاحیت کے باوجود ترجیحی ٹیرف کے معاہدے کو حتمی شکل دینے کی ضرورت پر زور دے کر اس سلسلے میں مذاکرات کے تسلسل کیلیے ایرانی فریق کی آمادگی کا اظہار کیا۔

انڈونیشیا کی وزیر خارجہ نے اقتصادی شعبے سمیت دونوں ممالک کے مابین  بڑھتے ہوئے دوستانہ تعلقات کی بھی تعریف  کرتے ہوئے کہا کہ امید ہےکہ دونوں فریق مشترکہ تجارتی کمیشن اور طے پانے والے معاہدوں کے ذریعے دونوں ممالک کے مابین تجارتی تعلقات میں آسانی پیدا کریں گے۔

بین الاقوامی قانون کی حمایت کے ساتھ ساتھ افغانستان میں قیام امن سے متعلق تازہ ترین پیشرفت کے بارے میں خیالات کا تبادلہ اسلامی جمہوریہ ایران اور انڈونیشیا کے وزرائے خارجہ کے درمیان ملاقات کے دیگر موضوعات میں سے ایک تھا۔

قابل ذکر ہے کہ محمد جواد ظریف گذشتہ روز جکارتہ روانہ ہوئے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha